جی ٹی وی نیٹ ورک
صحت

اسپرین کا زیادہ استعمال صحت کے لیے نقصاندہ؛ تحقیق

بوسٹن: تحقیقات سے معلوم ہوا ہے کہ اسپرین کا عام استعمال نقصان دہ ہے۔ طبی ماہرین نے اس بات سے خبردار کیا ہے کہ ’اسپرین‘ دوا کا استعمال ڈاکٹر کی ہدایت پر ہی کیا جائے اور سردرد کے لیے اسے بلکل استعمال نا کیا جائے۔

اس مطالعے کی بنیاد پر امریکن ہارٹ ایسوسی ایشن (اے ایچ اے) اور امریکن کالج آف کارڈیالوجی (اے سی سی) نے بھی اپنی ہیلتھ گائیڈ لائنز میں ترمیم کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایسا کوئی بھی شخص جو دل کا مریض نہ ہو، اسے اسپرین صرف اپنے ڈاکٹر کے مشورے سے استعمال کرنی چاہیے۔

علاوہ ازیں، وہ لوگ جنہیں دل کی کوئی بیماری لاحق ہو لیکن ساتھ ہی ساتھ ان میں جریانِ خون (bleeding) کا خطرہ بھی ہو، انہیں اسپرین کے استعمال میں خصوصی احتیاط برتنی چاہیے اور اپنے ڈاکٹر کے مشورے سے ہی اسپرین کی خوراک لینی چاہیے۔ مزید تفصیلات کے مطابق، دل کے وہ مریض جو 40 سال سے کم عمر ہیں – اور 70 سال سے زائد عمر کے وہ بزرگ بھی جنہیں دل کی کوئی بیماری لاحق نہیں – ان سب کو چاہیے کہ صرف ڈاکٹر سے مشورہ کرنے کے بعد ہی اسپرین استعمال کریں۔

بوسٹن کے ہارورڈ میڈیکل اسکول اور بیتھ اسرائیل ڈیکونیس میڈیکل سینٹر کے ماہرین نے مشترکہ طور پر انجام دی ہے جبکہ اس کے نتائج ’’اینلز آف انٹرنل میڈیسن‘‘ نامی ریسرچ جرنل کے تازہ شمارے میں شائع ہوئے ہیں۔

متعلقہ خبریں