جی ٹی وی نیٹ ورک
انٹرٹینمنٹ

اعجاز خان مسلمان نوجوان کی حمایت کرنے پر گرفتار

ممبئی: بھارت میں ہندو انتہا پسندوں کی جانب سے مسلمان نوجوان کو تشدد کے ذریعے ہلاک کرنے کی ویڈیو منظرعام پر آنے کے بعد یوٹیوب پر تبریز پر نوجوانوں کی بنائی گئی ویڈیو نے انہیں حوالات تک پہنچا دیا ہے۔

تشدد کے ذریعے ہلاک ہونے والے نوجوان تبریز انصاری کی ویڈیو نے سوشل میڈیا کے ذریعے عام افراد کو ہلا کر رکھ دیا تھا۔ بھارت میں ’ٹیم زیرو سیون‘ کے نام سے 5 نوجوانوں پر مشتمل گروپ نے تبریز پر تشدد کے واقعے کے بعد ٹک ٹاک ایپ کے ذریعے اس کی حمایت میں وڈیو بنائی، جس کے بعد بھارتی حکومت نے اس گروپ پر پابندی عائد کرکے ان کے خلاف قانونی کارروائی شروع کردی۔

بھارتی مسلمان اداکار اعجاز خان ان کی حمایت میں سامنے آئے تو انہیں بھی قانونی شکنجے میں جکڑ لیا گیا اور ان کے خلاف آیف آئی آر درج کرلی گئی۔

اداکار اعجاز خان نے کہا تھا کہ یوٹیوب سے اپنا اور گھر والوں کا پیٹ بھرنے والے ان بچوں کے ساتھ سیاست ہو رہی ہے۔ ان بچوں نے محنت کرکے اپنا نام بنایا تو آج ان کے خلاف نا انصافی ہو رہی ہے۔ لیکن جو بھارت میں ریپ کرتے ہیں انہیں کچھ نہیں کہا جارہا۔

متعلقہ خبریں