برلن کی دیوار اگر سکتی ہے تو ایل او سی کی عارضی حد بندی بھی ختم ہوسکتی ہے : شاہ محمود

شکر گھڑ : وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ بابا گرونانک کا پیغام امن تھا، لیکن آج آپ نے دیکھنا ہے کہ برصغیر میں نفرت کے بیج کون بو رہا ہے۔ برلن کی دیوار گر سکتی ہے تو لائن آف کنٹرول کی عارضی حد بندی بھی ختم ہوسکتی ہے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کرتارپور راہداری کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج ایک نئی تاریخ رقم ہونے جارہی ہے۔ کرتارپور کے دروازے دنیا بھر کے سکھ یاتروں کے لیے کھول دیے گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بابا گرونانک کا پیغام امن تھا، انہوں نے محبت کے بیج بوئے لیکن آج آپ نے دیکھنا ہے کہ برصغیر میں نفرت کے بیج کون بو رہا ہے۔ بابا گرو نانک کا امن کا پیغام صوفیا، اولیا، داتا گنج بخش کا پیغام ہے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ اسلام بھی امن، بھائی چارے اور محبت کا پیغام دیتا ہے، وزیراعظم عمران خان نے ایک سال قبل بھارتیوں سے کیا گیا وعدہ پورا کردیا۔

ان کا کہنا تھا کہ 72 برس سے مقبوضہ کشمیر کے لوگ انصاف کے منتظر ہیں، ایک وعدہ ہم نے پورا کیا ایک آپ کریں۔ دنیا کے سامنے برلن کی دیوار گر سکتی ہے اور یورپ کا نقشہ تبدیل ہوسکتا ہے، اگر کرتار پور راہداری کھل سکتی ہے تو لائن آف کنٹرول کی عارضی حد بندی بھی ختم ہوسکتی ہے اور خق خودارادیت کا وعدہ پورا کیا جا سکتا ہے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ آج یہ گوردوارہ سکھ برادری کے لیے کھولا گیا، نریندر مودی سری نگر کی جامع مسجد کشمیری مسلمانوں کے لیے کھول دی جائے تاکہ وہ وہاں جمعہ کی نماز ادا کرسکیں۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ نریندر مودی آپ وزیراعظم عمران خان کو شکریے کا موقع دے سکتے ہیں، مقبوضہ کشمیر سے کرفیو اٹھا کر، پیلیٹ گنز کا استعمال ختم کرکے، مواصلاتی بلیک آؤٹ ختم کرکے ایسا کرسکتے ہیں۔