جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

وفاقی حکومت نے جے آئی ڈی سی کے معاملے پر سپریم کورٹ سے رجوع کرلیا

جے آئی ڈی سی

اسلام آباد : وفاقی حکومت نے گیس ڈویلپمنٹ انفراسٹرکچرسیس آرڈیننس (جے آئی ڈی سی) کے معاملے پر سپریم کورٹ سے رجوع کر لیا۔

وفاقی حکومت نے اٹارنی جنرل کی جی آئی ڈی سی کے مقدمات سماعت کے لیے مقرر کرنے کی استدعا کی ہے۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ گیس انفراسٹرکچر سے متعلق مقدمات 2017 سے زیر التواء ہیں، ان مقدمات کی وجہ سے حکومت کا بہت بڑا ریونیو پھنسا ہوا ہے۔

درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ جے آئی ڈی سی سے متعلق مقدمات کو جلد سماعت کے لیے لگایا جائے۔

مزید پڑھیئے : حکومت کی بھارت سے زندگی بچانے والی ادویات کی درآمد کی اجازت

خیال رہے کہ گیس ڈویلپمنٹ انفراسٹرکچرسیس آرڈیننس (جے آئی ڈی سی) اجراء واپسی پر حکومت کو سخت شرمندگی کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

گیس ڈویلپمنٹ انفراسٹرکچرسیس آرڈیننس کے اجراء اور واپسی کے معاملے پر وفاقی کابینہ میں شدید اختلاف سامنے آیا تھا۔

نظریاتی گروہ کے مطابق وزیراعظم عمران خان کو غلط مشورے دینے والوں کی وجہ سے حکومت کو شرمندگی ہوئی۔ آرڈیننس کا مشورہ دینے والے عناصر کا تعین اور کاروائی عمل میں لائی جائے۔ مستقبل میں اہم معاملات پر فیصلوں کے جائزہ کے لیے کور گروپ بنانے کی تجویز ہے۔اہم معاملات میں کوئی بڑا اقدام اٹھانے سے پہلے کور گروپ جائزہ لے گا۔

خیال رہے کہ صدارتی آرڈیننس کے ذریعے با اثر صنعتکاروں کو 208 ارب روپے معاف کر دئے گئے تھے۔ یہ رقم مختلف کمپنیوں اور صنعتکاروں نے گیس انفرا اسٹرکچر ڈیویلپمنٹ سرچارج کی مد میں غریب کسانوں اور عوام سے 5 سال کے منصوبے کے دوران وصول کی تھی۔

یہ رقم قومی خزانے میں جمع ہونا تھی، جس کے ذریعے پاکستان ایران گیس پائپ لائن، ٹاپی منصوبہ اور توانائی کے دیگر منصوبے مکمل ہونا تھے۔

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے جی آئی ڈی سی ایکٹ میں آرڈیننس کے ذریعے ترمیم کی منظوری دی تھی۔

ترمیمی ایکٹ کے بعد متعلقہ کمپنیوں کو وصول شدہ 416 ارب روپے میں صرف 208 ارب روپے قومی خزانے میں جمع کروانا تھے۔

اس آرڈیننس کی منظوری کے بعد سے ہی پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔

ناقدین کا کہنا ہے کہ موجودہ حکومت بھی گزشتہ حکومتوں کے نقش قدم پر چل کر اپنوں کو نواز رہی ہے، یہ آرڈیننس بھی وزیراعظم عمران خان کے قریبی ساتھیوں کی کمپنیوں کو فائدہ پہنچانے کے لیے کیا گیا جس کے بعد ا وزیراعظم عمران خان نے فیصلہ واپس لے لیا۔

وزیراعظم عمران خان نے صنعتکاروں کو اربوں روپے معاف کرنے والا آرڈیننس واپس لیتے ہوئے اٹارنی جنرل کو سپریم کورٹ سے رجوع کرنے کی ہدایت کی تھی، جس کے بعد آج وفاقی حکومت نے اس معاملے پر سپریم کورٹ سے رجوع کر لیا ہے۔

متعلقہ خبریں