حمزہ شہباز کے جسمانی ریمانڈ میں مزید 14 روز کی توسیع

لاہور : احتساب عدالت نے حمزہ شہباز کے جسمانی ریمانڈ میں 14 روز کی توسیع کردی ہے۔

احتساب عدالت میں لانڈرنگ کیس کی سماعت کے موقع پر حمزہ شہباز کو سخت سکیورٹی میں عدالت میں پیش کیا گیا۔

سماعت کے موقع پر نیب کے تفتیشی نے عدالت کو بتایا کہ حمزہ شہباز شریف کی والدہ اور بہن کو بیرون ملک سے رقوم منتقل ہوئی۔ منی لانڈرنگ کے حوالے سے رانا ظہیر سمیت تین افراد کے نام سامنے آئے ہیں، جن سے تفتیش کرنا باقی ہے۔

نیب کے تفتیشی افسر کا یہ بھی کہنا تھا کہ اب تک کی تفتیش میں رانا ظہیر نے بتایا ہے کہ اس نے حمزہ شہباز شریف کو کوئی رقم نہیں بھیجی، اس کا نام محض استعمال کیا جا رہا ہے۔

عدالت نے حمزہ شہباز کے جسمانی ریمانڈ میں مزید 14 روز کی توسیع کر دی اور حمزہ شہباز کو 4 ستمبر کو دوبارہ عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیا۔

مقدمے کی سماعت کے بعد حمزہ شہباز شریف نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ انہیں شریف خاندان کے لوگوں پر ظلم کرنے والوں کی حالت پر ترس آ رہا ہے، جب ظلم حد سے بڑھ جاتا ہے، تو ختم ہو جاتا ہے۔ اب ظلم کے خاتمے کا وقت آ گیا ہے۔