جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

چیئرمین قائم کمیٹی رحمان ملک نے صلاح الدین کی پولیس حراست میں ہلاکت پر نوٹس لے لیا

صلاح الدین

اسلام آباد : چیئرمین قائم کمیٹی رحمان ملک نے صلاح الدین کی پولیس حراست میں ہلاکت پر نوٹس لیتے ہوئے وفاقی سیکرٹری داخلہ، ہوم سیکرٹری و آئی جی پنجاب سے رپورٹ اور کمیٹی میں شواہد کے ساتھ پیش ہونے کی ہدایت کی ہے۔

چئیرمین قائمہ کمیٹی برائے داخلہ سینیٹر رحمان ملک نے صلاح الدین کا پولیس حراست میں ہلاکت کا نوٹس لے لیا۔ رحمان ملک نے وزارت داخلہ کو نوٹس جاری کردیا۔

مزید پڑھیئے : رحمان ملک نے سوشل میڈیا پر دغا دینے والے سینیٹرز کی جعلی لسٹ کا نوٹس لے لیا

 پولیس حراست میں ہلاکت پر وفاقی سیکرٹری داخلہ، ہوم سیکرٹری و آئی جی پنجاب سے پانج دن کے اندر رپورٹ طلب کرلی۔

سینیٹر رحمان ملک نے ہدایت کی کہ کمیٹی کو پولیس کے مبینہ تشدد و ہلاکت پر پانج دن کے اندر رپورٹ جمع کریں۔ آئی جی پنجاب و ہوم سیکرٹری پنجاب کمیٹی اگلے اجلاس میں صلاح الدین کی ہلاکت پر بریفنگ، آئی جی پولیس پنجاب کمیٹی صلاح الدین کیخلاف ایف آئی آر و شواہد جمع اور کمیٹی کے سامنے متعلقہ تفتیشی، ایس ایچ او، ڈی ایس پی و ڈی پی او پیش کئے جائیں۔

مزید پڑھیئے : آج کا دن ہمیں شہداء اور غازیوں کے لازوال کارناموں کی یاد دلاتا ہے : سربراہ پاک بحریہ

چیئرمین قائمہ کمیٹی نے سوال کیا کہ کیا صلاح الدین کو کسی کورٹ کے سامنے پیش و ریمانڈ لیا گیا تھا؟ انہوں نے پوسٹ مارٹم رپورٹ و ضمنی و وارنٹ گرفتاری بھی طلب کرلی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ جرم کتنا ہی بڑا کیوں نہ ہو پولیس کو ماورائے قانون قتل کی اجازت نہیں ہے۔ اس طرح کے واقعات نہ صرف پولیس کی بدنامی بلکہ عوام کا پولیس پر عدم اعتماد کی باعث بنیں گے۔ ماورائے قانون قتل کی سزا کی قانون میں ترامیم کی جائے گی، تاکہ سزا سخت سے سخت ہو۔

انہوں نے کہا کہ صلاح الدین کی پولیس حراست میں ہلاکت سے عوام میں گہری تشویش پائی جاتی ہے۔

متعلقہ خبریں