جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

عرب ممالک کا رحجان امت مسلمہ کی بجائے کاروبار کی جانب ہے : فواد چودھری

عرب ممالک

اسلام آباد : فواد چودھری نے کہا ہے کہ پاکستان امن کا خواہشمند ہے لیکن بدقسمتی سے بھارت نازی جرمنی کی پالیسی پر عمل پیرا ہے۔ عرب ممالک کا رحجان امت مسلمہ کی بجائے کاروبار کی جانب ہے۔

نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چودھری نے کہا ہے کہ کشمیریوں کے ساتھ دل و خون کا رشتہ ہے، وہاں بچوں و خواتین کی زندگی اجیرن بن گئی ہے۔ وادی میں انسانی حقوق کا مسئلہ غیر معمولی حد تک شدت اختیار کر چکا ہے۔ دنیا کو دیکھنا چاہئے۔

مزید پڑھیں : فواد چوہدری نے پاکستان مخالف ٹویٹ پر راہول گاندھی کو کھری کھری سنا دیں

انہوں نے کہا کہ ہمارے آدھے گھنٹے کا احتجاج دنیا کے لئے واضح اور مؤثر پیغام ہے۔ بھارت اس چیز کو بھول جائے کہ ہم کشمیریوں کی آزادی سے پہلے ان کا ساتھ چھوڑ دیں گے۔ بھارت فوری طور پر کرفیو اٹھائے اور لوگوں کو جینے کا حق دے۔ وادی میں 90 لاکھ لوگ اپنے گھروں میں محصور ہیں۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ بھارت میں اس وقت نازی جرمنی جیسی پالیسی پر عملدرآمد کیا جا رہا ہے۔ کشمیر سے متعلق عرب ممالک کے کردار پر بات کرتے ہوئے فواد چودھری نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ‘‘توقع ہی اٹھ گئی غالب تو کیا کسی سے گلہ کریں’’ وفاقی وزیر نے کہا کہ بدقسمتی سے عرب ممالک کا رحجان امت مسلمہ کی بجائے کاروبار کی جانب ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کو عرب مسلم ممالک کی حکومتوں کے بجائے عوام کو ترجیح دینی چاہئے۔ ترکی اور ملائیشیا ہمارے ساتھ ہیں، جس کا ہم ان کے مشکور ہیں۔

واضح رہے کہ چند روز قبل سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر جاری بیان میں فواد چوہدری نے کہا تھا کہ وزیراعظم عمران خان بھارت کے لیے پاکستانی فضائی حدود مکمل بند کرنے پر غور کر رہےہیں۔ پاکستانی زمینی راستے سے بھارت کی افغانستان کے لیے تجارت کی بندش کی تجویز بھی زیر غور ہے۔


وفاقی وزیر نے یہ بھی کہا تھا کہ بھارت کے لیے پاکستان کی فضائی اور زمینی تجارتی روٹ بند کرنے کی تجاویز کابینہ اجلاس میں پیش کی گئیں۔ بھارت کے لیے فضائی حدود بند کرنے کے فیصلوں پر عمل درآمد کیلئے قانونی امور کا جائزہ لیا جارہا ہے۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے شروعات کی، اختتام ہم کریں گے۔

متعلقہ خبریں