ملکی سیاسی تاریخ میں پہلی سابق صدر، دو وزرائے اعظم اور کئی سیاست دانوں کی عید جیل میں ہوگی

لاہور: ملکی سیاسی تاریخ میں پہلی بار کئی سیاستدان اپنی عید جیل میں گزاریں گے، ایک سابق صدر، دو سابق وزرائے اعظم  و دیگر اہم سیاسی شخصیات کی عید بند کمروں میں ہوگی۔

یہ عید الاضحی ملکی سیاسی تاریخ کی پہلی عید ہو گی جب درجن بھر سے زائد سیاسی رہنماء تہوار جیل کی سلاخوں کے پیچھے گزاریں گے۔

تبدیلی سرکار کے عہد میں سابق صدر آصف علی زرداری، دو سابق وزرائے اعظم میاں نواز شریف اور شاہد خاقان عباسی کی عید قرباں جیل کی سلاخوں کے پیچھے گزرے گی۔

سیاسی جماعتوں کی دو مرکزی خواتین رہنماء جن میں مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز اور پیپلز پارٹی کی رہنماء فریال تالپور کا تہوار بھی جیل کی سلاخوں کے پیچھے بسر ہوگا۔

پنجاب کے اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز کی عید قید خانے کی دیوار تکتے گزرے گی تو سابق صوبائی وزرا رانا ثناء اللہ خان، سلمان رفیق، وفاقی وزرا مفتاح اسماعیل اور خواجہ سعد رفیق بھی اپنی عید سلاخوں کے پیچھے گزارنے پر مجبور ہوں گے۔

اسپیکر سندھ اسمبلی سراج درانی اور موجودہ حکومت کے رکن اسمبلی سبطین خان بھی مختلف کیسز میں گرفتاری کے بعد جیل میں ہیں۔

سیاسی رہنماؤں کے علاوہ ان کے رشتہ داروں کی عید بھی قید میں گزرے گی۔ نواز شریف کے بھتیجے یوسف عباس شریف اور رانا ثنا اللہ کے داماد رانا شہریار کا تہوار بھی قید تنہائی کی نذر ہو گا۔