ملک کی بڑی مارکیٹوں میں اسمگل شدہ اشیاء کی تلاش شروع

اسمگل شدہ اشیاء

اسلام آباد : فیڈرل بورڈآف ریونیو کی مشترکہ ٹیموں نے ملک کے بڑے شہروں میں واقع بڑی مارکیٹوں میں اسمگل شدہ اشیاء کی چیکنگ شروع کر دی ہے۔


چیئرمین ایف بی آر شبرزیدی کی جانب سے کیئے گئے ٹوئٹ  میں ان کا کہنا تھا کہ مشترکہ ٹیموں نے ڈالمن سینٹر کراچی، ایمپوریم مال،لاہور، سینٹورس مال اسلام آباد سمیت دیگر بڑے شاپنگ مالز کے دورے کیے ہیں۔

 مزید پڑھیں : ایف بی آر کا آج 50 نامور شخصیات کی بے نامی جائیدادوں کے خلاف کارروائیاں کا اعلان

ان کا کہنا ہے کہ اسمگلنگ کے خاتمہ کیلیے مارکیٹوں کے دورے کے موقع پر ٹیموں سے تعاون پر ایف بی آر کی جانب سے تاجروں کا مشکور ہوں۔

شبر زیدی نے تاجروں و صنعتکاروں کو اپنے پیغام میں کہا کہ آئیں ملک میں ٹیکس کلچر کو فروغ دیں۔ ملک بھر کی مارکیٹوں میں موجود اسمگل شدہ اشیاء و غیرملکی اشیاء کی درآمدی دستاویزات کی چیکنگ نہ صرف جاری رہے گی، بلکہ مارکیٹوں کی چیکنگ کا دائرہ کار مزید بڑھایا جائیگا۔

 مزید پڑھیں : بے نامی اثاثے ڈھونڈنا آسان نہیں : شبر زیدی

چیئرمین ایف بی آر نے مزید کہا کہ درآمدی اشیاء پر کسٹمز ڈیوٹی و دیگر ٹیکسوں کیلئے ویلیوایشن کا نظام تبدیل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ درآمدی اشیا کی ویلیوایشن کیلئے پرانا کسٹمز جنرل آرڈر ریوائز کیا جائیگا۔

انہوں نے کہا آٹو پارٹس کی ویلیوایشن مالیت کی بجائے وزن کی بنیاد پر کی جائیگی، تاہم انکا کہنا تھا ویلیوایشن میکنزم میں تبدیلی انڈسٹری کی سہولت کیلئے ان کی مشاورت سے کی جائے گی۔