جی ٹی وی نیٹ ورک
پاکستان

مینارپاکستان میں جو کچھ ہوا اس سے شرم آئی اور تکلیف ہوئی: عمران خان

مینارپاکستان میں جو کچھ ہوا اس سے شرم آئی اور تکلیف ہوئی: عمران خان

لاہور: عمران خان کا کہنا ہے کہ مینارپاکستان میں جو کچھ  ہوا اس سے شرم آئی اور تکلیف ہوئی۔

وزیراعظم عمران خان نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ماضی میں بدقسمتی سے تعلیم کو کسی نے اہمیت نہیں دی ، ملک میں یکساں نصاب پرکبھی کام نہیں کیا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ انگریزوں نے 2 طرح کےنصاب بنائے ،انگلش میڈیم سسٹم نے ہمیں مغربی کلچرکا غلام بنادیا۔

انہوں نے کہا کہ ماضی کی حکومتیں چھوٹے کاموں کی بھی بہت تشہیر کیا کرتا تھیں ، عثمان بزدار اچھے کاموں میں اپنا نام لانا ہی نہیں چاہتے ، پنجاب میں آپ نے وہ کام کیے جو کسی نے نہیں کیے ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ سابقہ ادوار میں ڈیم بنانے پر بھی توجہ نہیں دی گئی، کسی حکومت نے نہیں سوچا کہ مستقبل کا کیا بنے گا۔ پاکستان میں ملٹری ڈکٹیٹرز نے 2 ڈیم بنائے۔

یہ بھی پڑھیں عمران خان سمجھتے ہیں کہ صرف سچ وہ ہے جو خود بولتے ہیں : شازیہ مری

وزیراعظم  نے کہا کہ ماضی کی حکومتوں کی نظر ہمیشہ آنے والے الیکشن پر ہوتی تھی، پچھلی حکومتیں تھوڑا کام اور شور زیادہ کرتی تھیں۔

ملک میں کسی نے نئی نسل کے بارے میں نہیں سوچا، بدقسمتی سے ملک میں جنگلات کو بھی تباہ کردیا گیا، ہماری حکومت 10ارب درخت لگارہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ بچوں کی تربیت ہونا بہت ضروری ہے، جو تباہی دیکھ رہے ہیں بچوں کی تربیت نہ ہونےکی وجہ سے ہے۔ مینارپاکستان میں جو کچھ  ہوا شرم آئی اورتکلیف ہوئی۔

عمران خان نے کہا کہ مغرب میں عورت کی اتنی عزت نہیں جوہم یہاں کرتےتھے،جو حرکتیں ہورہی ہیں یہ ہمارے کلچراور دین کا حصہ نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں اپنے بچوں کوسیرت النبی ﷺ سے آگاہی دینے کی ضرورت ہے، قرآن بھی ہمیں کہتا ہےکہ آپ ﷺکی زندگی سے سیکھو۔

یہ بھی پڑھیں یکساں تعلیمی نظام سے ایک قوم بنائیں گے : وزیراعظم عمران خان

وزیراعظم کا کہنا ہے کہ ٹیکنالوجی کے ساتھ سیرت النبی ﷺکو بھی اسکولوں میں لازمی طورپرنافذ کرنا ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ موبائل کےغلط استعمال کی وجہ سے جنسی جرائم میں اضافہ ہورہا ہے۔

متعلقہ خبریں