جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

پاکستان نے ایف اے ٹی ایف ایکشن پلان پر اپنا جواب جمع کرا دیا

ایکشن پلان

بنکاک : پاکستان نے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) کے ایکشن پلان پر عملدرآمد سے متعلق اپنا جواب جمع کرا دیا ہے۔

ایف اے ٹی ایف اور پاکستان کے درمیان ایکشن پلان پر عملدرآمد سے متعلق مذاکرات بنکاک میں ہوئے، جس میں پاکستانی ٹیم کی قیادت وفاقی وزیر اقتصادی امور حماد اظہر نے کی۔

یہ بھی پڑھیں : بھارتی سازشیں ناکام، ایف اے ٹی ایف اکتوبر میں پاکستان کے اقدمات کا پھر جائرہ لے گا

وفاقی وزیر اقتصادی امور حماد اظہر نے بتایا کہ ایف اے ٹی ایف کی ٹیکنیکل ٹیم کے ساتھ بات چیت کی اور تکنیکی سطح پر ہر 4 ماہ کی پیش رفت پر حکام کو بریف کیا گیا، پاکستان نے گزشتہ 4 سے 5 ماہ میں اہداف کو حاصل کیا ہے، ایف اے ٹی ایف حکام کو بریفنگ پہلے سے بہت مؤثر رہی ہے۔

حماد اظہر نے کہا کہ ایف اے ٹی ایف کا تکنیکی وفد پاکستان کی بریفنگ پر رپورٹ مرتب کرے گا، جو اگلے ماہ ایف اے ٹی ایف کے رکن ممالک کو پیش کی جائے گی، جس کی روشنی میں پاکستان کے اسٹیٹس کا فیصلہ کیا جائے گا۔

وزارت خزانہ ذرائع کے مطابق ان مذاکرات کے نتیجے میں پاکستان کا نام گرے لسٹ سے نکالنے یا بلیک لسٹ میں شامل کرنے کا فیصلہ ہوگا۔

واضح رہے کہ ایف اے ٹی ایف کے 13 ستمبر تک جاری رہنے والے اجلاس میں پاکستان کی جانب سے آخری دفاع پیش کیا گیا ہے۔

اجلاس کی صدارت چین کے فنانشل انٹیلیجنس یونٹ کے سربراہ نے کیا۔ ایشیا پیسیفک گروپ میں پاکستان کی کارکردگی کا جائزہ لیا جائے گا۔

اجلاس کیلئے وزارت خارجہ و داخلہ اور چاروں صوبوں کی مشاورت سے نئی نیشنل رسک اسیسمنٹ مکمل کی گئی تھی۔ پاکستان نے منی لانڈرنگ اور ٹیررازم فنانسنگ کی روک تھام سے متعلق ٹرانس نیشنل جائزہ رپورٹ پیش کی۔

رپورٹ میں بینکنگ سیکٹر، نان بینکنگ سیکٹر اور فنانشل سیکٹر کی سپروائزری صلاحیت میں اضافے،  مالیاتی اداروں میں غیر قانونی سرگرمیوں کی روک تھام، اسٹاک مارکیٹ، انشورنس سیکٹر میں غیر قانونی سرمایہ کی روک تھام پر اقدامات کے حوالے سے بھی ادارے کو اعتماد میں لیا گیا۔

ایشیا پیسیفک گروپ کی ویب سائٹ : http://www.apgml.org

متعلقہ خبریں