جی ٹی وی نیٹ ورک
دنیا

مظفرپور کے دارلامان میں معصوم بچیوں سے زیادتی کے واقعات 

یہاں آپ کو بتائیں بھارتی دارلحکومت نئی دہلی تو خواتین کے لئے دوزخ سے کم نہ تھا مگر ریپ اور جنسی زیادتی کا جن اب پورے بھارت میں پھیل گیا ہے۔
بہار کے سرکاری شیلٹر ہوم میں کم عمر لڑکیوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنائے جانے کا انکشاف ہوا ہے۔ بھارتی ریاست بہار کے دارلامان میں معصوم بچیوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا جانے لگا ہے معصوم بچیوں سے بیہودہ گانوں پر ڈانس کروانے کے بعد ان کی عصمت دری بھی کی جاتی تھی۔
پولیس نے واقعے کے مرکزی ملزم سمیت 20 افراد کے خلاف چائلڈ پروٹیکشن ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کرلیا۔ تفصیلات کے مطابق بھارتی ریاست بہار کے شہر مظفر پور میں میں واقع سرکاری شیلٹر ہومز میں مقیم لڑکیوں سے زبردستی بیہودہ گانے پر ڈانس کروانے اور نیم بے ہوشی کی حالت میں جنسی زیادتی کرنے کے جرم میں مرکزی ملزم براجیش تھاکر پر فرد جرم عائد ہوگئی۔
بھارتی ٹی اے بی پی نیوز کے مطابق ایک سات سالہ معصوم بچی کو جنسی زیادتی کے بعد قتل کرکے لاش کو زمین میں دفن کردیا اس انکشاف کے بعد پولیس نے دارلامان کے نزدیک کھدائی کا بھی شروع کردیا ہے کرائم برانچ انویسٹی گیشن ٹیم کا کہنا ہے کہ جن متاثرہ لڑکیوں سے زیادتی و ڈانس پر مزاحمت کی انہیں تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔
بھارت کے نجی ادارے کی آڈٹ رپورٹ کے مطابق مذکورہ شیلٹر ہوم میں 10 برسوں کے دوران درجنوں لڑکیوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا ہے۔

متعلقہ خبریں