جی ٹی وی نیٹ ورک
کالمز و بلاگز

پانی کی کمی کا مقابلہ کرنے کے 10 طریقے

پانی کی کمی

ہر گزرتے دن کے ساتھ پاکستان میں بہت سے مسائل بڑھتے جارہے ہیں ان میں سے ایک مسئلہ پانی کی کمی بھی ہے ۔ پانی کی کمی کو کیسے پورا کیا جائے اس کے لئے ریاست اپنی کوششیں کررہی ہے ۔

لیکن بحثیت عوام پاکستانیوں کی بھی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ پانی کی کمی کے مسئلے کو سمجھیں اور اسے احتیاط سے استعمال کریں ۔پانی کے ذخائر دن بہ دن کم ہوتے جارہے ہیں اور جب تک نئے ذخائر میں اضافہ نہیں ہوتا اس وقت تک پانی کا حفاظت سے استعمال کرنا ہم سب کی ذمہ داری ہے۔ پانی کو حفاظت سے استعمال کرنے کے یہ  10طریقے جانئے :

یہ پڑھیں : چاچا بشیر اور میرا مکالمہ

٭پاکستان بھر کی مسجدوں میں روزانہ کڑوڑوں کی تعداد میں نمازی افراد وضو کرتے ہیں اور یہ پانی بہہ کر نالے میں چلا جاتا ہے اور ضائع ہوجاتا ہے اس پانی کے نکاسی کے نظام کو بہتر بنا کر اس کا پانی کیاری اور قریبی گراونڈ کی گھاس کے لئے استعمال ہوسکتا ہے۔اس بارے میں اگر مذہبی طبقہ اپنی کوشش کریں تو اس سے بہت بڑی مقدار میں پانی محفوظ کیا جاسکتا ہے۔

٭گھروں اور بالخصوص پبلک مقامات پہ اس طرح کے نل لگائے جائیں جس میں پانی کی رفتار کم آتی ہو کیونکہ اکثر اوقات تیز پانی کے بہاؤ کی وجہ سے کافی پانی ضائع ہوجاتا ہے ۔

٭ تقریباً ہر گھر میں ہی پودے یا پھر چھوٹی کیاریاں موجود ہوتی ہیں،اُن کیاریوں اور گملوں میں پانی پائپ کے بجائے بالٹی سے ڈالئے کیونکہ بالٹی سے احتیاط سےڈالا جاتا ہے اور ضائع بھی کم ہوتا ہے۔

10-ways-to-combat-water-resources-reduction

٭اکثر لوگ اپنی گاڑیاں روز دُھلواتے ہیں ، ان کو چاہیئے کہ روزانہ دُھلوانے کے بجائے ہفتے میں دو یا تین بار دُھلوائیں ۔

 ٭کپڑے روزانہ دھونے کے بجائے ہفتہ وار سلسلہ رکھا جائے اور کپڑوں میں استعمال ہونے والے ڈٹرجنٹ کے پانی کو فرش اور واش روم دھونے میں استعمال کیا جائے، اس سے پانی کے ساتھ ساتھ ڈٹرجنٹ کی بھی بچت ہوگی۔

٭ہاتھ منہ دھوتے ہوئے نل ہلکا کھولئے اور بالخصوص دانت برش کرتے وقت پانی کا نل بند رکھئے ۔

٭ممکن ہو تو واش بیسن کےڈرینج سسٹم کو واش روم کے فلش سسٹم سے جوائنٹ کردیں تاکہ استعمال شدہ پانی دوبارہ استعمال ہوسکیں ۔ یہ مشکل کام ہے لیکن اگر اس طرح کا سسٹم بن گیا تو اس سے بہت سے پانی کی بچت ہوجائے گی۔

٭ برتن ہر گھر میں روزانہ تین بار تو دُھلتے ہیں۔ برتن دھوتے وقت پانی کا بہاؤ کم سے کم رکھیں اور اس کی ترغیب اپنے گھر کی عورتوں کو ضرور دیں۔

٭ کارخانوں میں پانی کا استعمال بہت زیادہ ہے تو اس میں واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹ کا استعمال کرکے پانی کو دوبارہ قابل استعمال بنایا جائے۔

10-ways-to-combat-water-resources-reduction
٭ پینے کے پانی کو ضائع نہ کیا جائے عام طور پر دیکھا گیا ہے کہ پانی کا آدھا گلا س چھوڑدیا جاتا ہے یا پھر منرل واٹر کی بوتل جو بالکل تھوڑی سےاستعمال ہوئی ہے اس کو بھی کچرے میں پھینک دیا جاتا ہے۔ یہ بات سمجھیئے کہ پانی بہت بڑی نعمت ہے اور اس کو ضائع کرکے کفران نعمت نہ کیجئے ۔
پانی پینا کا ہو یا پھر استعمال کرنے کا ہو، اس کو ضائع ہونے سے بچا یا جائے ۔ اس طرح کے چھوٹے چھوٹے اقدامات کرکے پانی کا بہت بڑا حصہ ہم ضائع ہونے سے بچاسکتے ہیں ۔ویسے بھی پانی خدا کی نعمت ہے اور ایسی نعمت ہے کہ جس کا احساس پیاس کے وقت ہی حقیقی طور پہ ہوتا ہے۔ پانی کو محفوظ کیجئے ، اپنے لئے اپنے بچوں کے مستقبل کے لئے۔

 

نوٹ : جی ٹی وی نیٹ ورک اور اس کی پالیسی کا لکھاری اور نیچے دئے گئے کمنٹس سے متّفق ہونا ضروری نہیں۔

متعلقہ خبریں