مجسمہء حسن اداکارہ مدھو بالا کا 86واں یومِ پیدائش

بالی وڈ کی مشہور فلمی اداکارہ ’مدھو بالا‘ کا اصل نام ممتاز جہان بیگم دہلوی تھا۔ مجسمہء حسن اداکارہ مدھو بالا 14 فروری 1933ء میں پیدا ہوئیں۔ ان کے والد کا تعلق پاکستان کے علاقے صوابی سے تھا لیکن انہوں نے تقسیم ہند کے بعد بھارت میں ہی رہنے کو ترجیح دی۔

مدھو بالا نے 1942ء میں9 سال کی عمر میں فلم ’’بسنت ‘‘ سے فلمی کیریئر کا آغاز کیا جسے بے حد کامیابی ملی۔ اسکے بعد انہوں نےمینا کماری اور دیویکا رانی کے مشورے پر اپنا فلمی نام مدھو بالا رکھ لیا۔

1947ء میں مدھوبالا نے 14 سال کی عمر میں راج کپور کے مقابل فلم ’ نیل کمل ‘ میں پہلی بار مرکزی کردار ادا کیا۔ مدھو بالا نے درجنوں فلموں میں کام کیا جن میں ممتاز محل، دلاری، محل، امتحان، مدھوبالا، چلتی کا نام گاڑی، امر، مغل اعظم، بے قصور، ارمان اور دیگر شامل ہیں۔ 1964ء میں ریلیز ہونے والی فلم’شرابی‘ ان کی آخری فلم تھی۔

یوں تو مدھو بالا کے چاہنے والوں کی کمی نہ تھی مگر وہ خود ہیرو دلیپ کمار کے عشق میں گرفتار ہوگئیں۔ وہ شادی بھی دلیپ کمار سے ہی کرنا چاہتی تھیں مگر ایسا ممکن نہ ہو سکا اور ان کی شادی اس وقت کے نامور گلوکار کشور کمار سے ہوئی۔

اداکارہ مدھو بالا 23 فروری 1969ء کو صرف 36 سال کی عمر میں عارضہ قلب میں مبتلا ہوکر اس دنیا سے رخصت ہوگئیں۔