جی ٹی وی نیٹ ورک
اہم خبریں

طاہرداوڑقتل کیس: افغان حکومت پاکستان کو جوابدہ ہے،رحمان ملک

چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے داخلہ سینیٹر رحمان ملک نے ایس پی طاہر خان داوڑ کا افغانستان میں قتل کا نوٹس لے لیتے ہوئے وزارت داخلہ کو 20 نومبر تک قتل کے تمام پہلووں پر جامع رپورٹ جمع کرانے کی ہدایت کردی۔

قائمہ کمیٹی نے ایس پی طاہر خان داوڑ کا افغانستان میں بہیمانہ قتل کا نوٹس لیا۔ سینیٹر رحمان ملک نے طاہر داوڑ کے اغواء اور قتل کے تمام پہلوؤں پر سوالات اٹھاتے ہوئے کہا کہ افغانستان حکومت پاکستان کو جوابدہ ہے کہ شہید ایس پی طاہر داوڑ کا قتل کس نے اور کیسے ہوا۔ افغان حکومت بتائے کہ کیسے معلوم ہوا کہ ملنے والی مسخ شدہ لاش طاہر داوڑ کی ہے۔

سینیٹر رحمان ملک نے یہ بھی سوال کیا کہ ایس پی طاہر داوڑ کے اغواء پر پولیس نے کیا پیش رفت کی تھی۔ اسلام آباد و خیبرپختونخواء پولیس نے ایس پی طاہر داوڑ کی بازیابی کیلئے کیا کاروائیاں کی تھیں۔

انکا مزید کہنا تھا کہ پارلیمنٹ اسطرح کے ظالمانہ واقعات پر چپ نہیں رہ سکتی، حقائق تک پہنچنا ضروری ہے۔ غمزدہ خاندان کے غم میں برابر کے شریک ہیں، حکومت قاتلوں کو جلد انصاف کے کٹہرے میں لائے۔ شہید ایس پی طاہر داوڑ کے بیہمانہ قتل کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔

 

متعلقہ خبریں