جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

22 کروڑ عوام کی چیخیں نکل گئیں، اب عمران خان کی نکلنی چاہیے : شہباز شریف

اسلام آباد : سوا سال میں 22 کروڑ عوام کی چیخیں نکل گئیں لیکن آج دن آگیا ہے کہ عمران خان کی چیخیں نکلنی چاہیے، عمران خان کا دماغ خالی ہے، بھیجہ نہیں ہے اور یہ جادو ٹونے سے حکومت چلا رہے ہیں، جادو ٹونے اور پھونکیں مار کر تعیناتیاں ہورہی ہیں۔

مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے جمیعت علماء اسلام (ف) کے آزادی مارچ میں شرکت کی۔ مولانا فضل الرحمٰن نے ان کا استقبال کیا۔

مارچ سے خطاب کرتے ہوئے شہباز شریف کا کہنا تھا کہ تبدیلی پہلے نہیں بلکہ تبدیلی اب آئی ہے اور یہ تبدیلی تحریک انصاف کی حکومت کو بہا کر لے جائے گی۔

قائد حزب اختلاف نے کہا کہ نواز شریف نے ڈینگی کا خاتمہ کیا اور اس حکومت میں 50 ہزار لوگ ڈینگی وائرس سے بیمار ہوگئے، وزیر اعظم کہیں نظر نہ آئے۔

انہوں نے کہا کہ ہماری حکومت میں کینسر کے مریضوں کے لیے مفت دوائیاں دی جاتی تھیں، آج ادویات تک میسر نہیں ہیں، کیا ریاست مدینہ میں اس طرح کا کوئی عمل ہوسکتا تھا؟ آج طلبا و طالبات سے وظیفے چھین لیے گئے، مزدور بے روزگار ہیں، دکاندار کی دکان بند ہوگئی، سرمایہ کار کا سرمایہ ختم ہوگیا، یتیم اور بیوائیں حکومت کو بدعائیں دے رہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ سوا سال میں 22 کروڑ عوام کی چیخیں نکل گئیں لیکن آج دن آگیا ہے کہ عمران خان کی چیخیں نکلنی چاہیے، ہمیں اس جعلی حکومت سے جان چھڑانی چاہیے اور جب تک عمران نیازی سے جان نہیں چھوٹتی تب تک ہم ان کی جان نہیں چھوڑیں گے۔

اپوزیشن لیڈر کا کہنا تھا کہ عمران خان کا دماغ خالی ہے، بھیجہ نہیں ہے اور یہ جادو ٹونے سے حکومت چلا رہے ہیں، جادو ٹونے اور پھونکیں مار کر تعیناتیاں ہورہی ہیں، مجھے خطرہ یہ ہے کہ یہ جو جادو ٹونے سے تبدیلی لانا چاہتے تھے وہ پاکستان کی سب سے بڑی بربادی بن گئی ہے، میں نے 72 برس میں پاکستان کی اتنی بدتر صورتحال نہیں دیکھی۔

مسلم لیگ (ن) کے صدر نے کہا کہ اگر موقع ملے ہم 6 ماہ معیشت ٹھیک کردیں گے ورنہ میرا نام عمران خان نیازی رکھ دینا۔ اداروں نے جتنی حمایت عمران خان کو دی اگر 10 فیصد ہمیں مل جاتی تو متحدہ اپوزیشن کے ساتھ مل کر حکومت کرلیتے۔

متعلقہ خبریں