جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

الیکشن کمیشن کی 37 میں سے 27 سفارشات کا مشین سے تعلق ہی نہیں ہے: شبلی فراز

شبلی

لاہور: شبلی فراز کا کہنا ہے کہ ای وی ایم کی مخالفت کرنے والے نہیں چاہتے کہ الیکشن شفاف ہوں، الیکشن کمیشن کی 37 میں سے 27 سفارشات کا مشین سے تعلق ہی نہیں ہے۔

وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی شبلی فراز کا پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ کئی دنوں سے ملک میں ای وی ایم پر بحث ہورہی ہے، مشین ایک ٹیکنالوجی ہی نہیں شفافیت پر مبنی سوچ ہے، مشین کی مخالفت وہ عناصر کررہے ہیں جو دھاندلی سے جیتتے رہے، ماضی کے تمام انتخابات پر اعتراضات کیے جاتے رہے۔

شبلی فراز کا کہنا تھا کہ ٹیکنالوجی اس وقت کی اہم ضرورت ہے، زراعت ، تجارت ،میڈیکل سمیت ہر چیز میں ٹیکنالوجی کا استعمال ہورہا ہے، ٹیکنالوجی کی مخالفت وہی کرتے ہیں جو چاہتے ہیں کہ شفافیت نہ ہو، ای وی ایم کی مخالفت کرنے والے نہیں چاہتے کہ الیکشن شفاف ہوں، ہم اپنے مفاد کے بجائے جمہوریت کے مستقبل کو دیکھ رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: الیکٹرانک ووٹنگ مشین پر اعتراضات کے معاملے پر نیا تنازعہ کھڑا ہوگیا

ان کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کے مطابق الیکشن میں شفافیت کیلئے ٹیکنالوجی کو راستہ دینا چاہیے، جمہوریت کی مضبوطی کیلئے انتخابات کا شفاف انعقاد ضروری ہے، الیکشن کمیشن نے قائمہ کمیٹی اجلاس میں مشین سے متعلق 37سفارشات دیں، الیکشن کمیشن کی 37 میں سے 27 سفارشات کا مشین سے تعلق ہی نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ 27 نکات کا تعلق الیکشن کمیشن کی استعداد کار سے ہے، قانون سازی حکومت کا مینڈیٹ ہے، سب ادارے قانون کے تابع ہیں، الیکشن کمیشن کی تکنیکی کمیٹی کا اجلاس آج ہورہا ہے۔

متعلقہ خبریں