جی ٹی وی نیٹ ورک
اہم خبریں

وزیرِ خزانہ اسد عمرکا قومی اسمبلی کے اجلاس سے خطاب

بیل آؤٹ کے بغیر پاکستان کی معیشت بحران سے نہیں نکل سکتی جسکے لئے ہم بیک وقر آئی ایم ایف سے بھی بات چیت کریں گے اور اسکے ساتھ ساتھ ہم دوست ممالک سے بھی بات چیت شروع کریں گے۔

وزیرِ خزانہ اسد عمرنے قومی اسمبلی کے اجلاس میں اظہار خیا کرتے ہوئے کہا کہ آئی ایم ایف کی سربراہ کرسٹینا روگارڈ سے کہا ہے کہ یہ ہمارا آخری پیکج ہوگا آئی ایم ایف کی سربراہ نے حکومتی اقدامات کو سراہا ہے ایکسپورٹ کیلئے گیس کی قیتیں کم کی ہیں 70 فیصد صارفین کی بجلی قیمتوں میں اضافہ نہیں کیا گیا سپلمنٹری بجٹ میں درآمدات پر 5 ارب کے ٹیکسز کم کئے ہیں، چین کے دورے پر سی پیک کو دوسرے مرحلے میں لیکر جارہے ہیں۔

چین کے ساتھ پاکستان کا باہمی تجارتی خسارے کو کم کرنے کے حوالے سے بات چیت ہوگی چینی کمپنیوں کیساتھ شراکت کرکے پاکستانی اشیاء بین الاقوامی سطح پر ایکسپورٹ کرینگے ایکسپورٹر کیلئے مثبت اقدامات کرکے برآمدات میں اضافہ کریں گے چھوٹے صنعتکاروں کو پیکجز دئیے جائیں گے۔

ہونہار طالب علموں کو بیرون ممالک میں سکالر شپس دئیے جائیں گے آئیندہ پانچ سال میں ایس ایم ای سیکٹر میں 20 لاکھ نوکریاں مارکیٹ میں آئیں گے۔

 

متعلقہ خبریں