جی ٹی وی نیٹ ورک
اہم خبریں

ایک ڈبی میں دس سگریٹ، اسلام آباد ہائی کورٹ میں سماعت

اسلام آباد ہائی کورٹ میں پاکستان ٹوبیکو کمپنی کی جانب سے ایک ڈبی میں دس سگریٹ بنانے کے معاملے پر سماعت میں جسٹس عامر فاروق نے وزارت صحت اور وزارت کامرس کو جواب طلبی کے نوٹس جاری کرتے ہوئے کیس کی سماعت غیر معینہ مدت تک کیلئےملتوی کردیا۔

اسلام آباد ہائی کورٹ میں پاکستان ٹوبیکو کمپنی کی جانب سے ایک ڈبی میں دس سگریٹ بنانے کے معاملے پر جسٹس عامر فاروق کی سربراہی میں سماعت کی گئی۔

وکیل درخواست گزار نے کہا کہ پاکستان نے ڈبلیو ایچ او کے ایک معاہدے پر دستخط کیے ہوئے ہیں جس کے تحت ڈبی میں 20 سگریٹ سے کم نہیں بنائے جاسکتے۔ پوری دنیا میں 20 سگریٹ والی ڈبی ہی استعمال کی جاتی ہے۔

وکیل درخواست گزار نے کہا کہ دس سگریٹ والے پیکٹ پر پابندی کا مقصد بچوں کو سگریٹ نوشی سے دور رکھنا ہے۔ تمباکو نوشی کے تدارک کیلئےاقدامات ڈبلیو ایچ او کی جانب سے کیے گئے تھے۔ وزارت صحت نے بھی پاکستان ٹوبیکو کمپنی کو دس سگریٹ والی ڈبے بنانے سے منع کیا۔

وکیل درخواست گزار نے بتایا کہ وزارت کامرس کے مطابق ایسا کوئی قانون موجود نہیں کہ آپ دس سگریٹ والی ڈیبی بھی برآمد کر سکتے ہیں۔ جسٹس عامر فاروق نے کیس پر ریمارکس دیتے ہوئے کہا یہ عوامی مفاد کا کیس ہے عدالت نے وزارت صحت اور وزارت کامرس کو نوٹسز جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا جبکہ کیس کی سماعت غیر معینہ مدت تک کے لئے ملتوی کردی گئی۔

 

متعلقہ خبریں