جی ٹی وی نیٹ ورک
اہم خبر

پشاور کے مدرسے میں بم دھماکہ، 7 طلباء شہید، 70 سے زائد زخمی

مدرسے میں

پشاور : کوہاٹ روڈ پر دینی مدرسے میں بم دھماکے سے سات طلباء شہید اور ستر سے زائد زخمی ہوگئے، دھماکے کے بعد اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی۔

پشاور کی دیر کالونی میں کوہاٹ روڈ پر واقع مدرسے میں اس وقت زوردار دھماکہ ہوا، جب معلم کی جانب سے طلباء کو دینی درس دیا جارہا تھا۔ دھماکے کی ویڈیو بھی سامنے آگئی ہے۔

دھماکہ ہوتے ہی ہر طرف چیخ و پکار مچ گئی، متعدد طلباء زخمی ہوگئے اور مدرسے میں چاروں جانب کھڑکیوں کے شیشے اور خون پھیل گیا۔ مدرسے میں زیر تعلیم طالب علم کے مطابق دھماکے کے وقت درس میں تقریبا بارہ سو طلبا موجود تھے۔

یہ بھی پڑھیں : کوئٹہ : ہزار گنجی بم دھماکے کا مقدمہ درج

دھماکے کی اطلاع ملنے پر پولیس اور بم ڈسپوزل یونٹ کے اہلکار مدرسے پہنچ گئے اور زخمی ہونے والے طلباء کو فوری طور پر لیڈی ریڈنگ اسپتال منتقل کردیا گیا، جہاں کئی زخمیوں کی حالت تشویش ناک بتائی جاتی ہے۔ 70 زخمیوں کو لیڈی ریڈنگ اسپتال، 37 کو سٹی اسپتال کوہاٹ روڈ، دو حیات آباد میڈییکل کمپلیکس دو خیبر ٹیچنگ اسپتال لائے گئے ہیں۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ دہشت گردوں نے مدرسے میں بارودی مواد سے بھرا بیگ رکھا، جس میں پانچ کلو گرام سے زائد دھماکہ خیز مواد موجود تھا۔ دھماکہ ٹائم ڈیوائس کے ذریعے کیا گیا۔ ایس پی سٹی وقار کھرل کے مطابق مسجد انتظامیہ کو پہلے بھی دھمکیاں دی گئی تھیں۔

وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ معصوم بچوں کو نشانہ بنانا انتہائی قابل مذمت اور ظالمانہ قدم ہے، پولیس کو واقعے کی تمام پہلوؤں سے تحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔ پولیس اور قانون نافذ کرنے والے دیگر ادارے دھماکے کی تحقیقات کررہے ہیں۔

متعلقہ خبریں