جی ٹی وی نیٹ ورک
پاکستان

قانون کے مطابق فارن فنڈنگ کیس کو دیکھا جائے تو 7 سال کی قید بنتی ہے: شرجیل میمن

شرجیل میمن

کراچی: شرجیل میمن کا کہنا ہے کہ فارن فنڈنگ کیس اوپن اینڈ شٹ کیس ہے، قانون کے مطابق اس کیس کو دیکھا جائے تو 7سال کی قید بنتی ہے۔

وزیر اطلاعات سندھ شرجیل انعام میمن کا نیوز کانفرنس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ پی ٹی آئی نے ہر حربہ استعمال کیا کہ فارن فنڈنگ کا فیصلہ نہ آسکے، تحریک انصاف نے اداروں پر دباؤ ڈالا، فیصلہ آنے پر شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پی ٹی آئی سرخرو ہوگئی، تحریک انصاف کے رہنماؤں نے کہا کہ ہمارے خلاف یہ فیصلہ نہیں آیا، اگر فیصلہ پی ٹی آئی کے خلاف نہیں آیا تو یہ احتجاج کس بات پر کررہے ہیں۔

شرجیل میمن کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن اور ملکی اداروں کے خلاف سوشل میڈیا پر مہم کیوں چل رہی ہے، پاکستانی عوام کو ان کے جھوٹ کو دیکھنا ہوگا، جھوٹا بیانیہ عوام کے کٹہرے میں جھوٹا ثابت ہوا ہے، الیکشن کمیشن نے صرف سزا نہیں سنائی، عمران خان کے خلاف پورا کچا چٹھا سامنے آگیا۔

یہ بھی پڑھیں: عمران خان کی نااہلی کے لیئے الیکشن کمیشن میں ریفرنس دائر کر دیا گیا

ان کا کہنا تھا کہ فیصلے کے بعد کوئی وجہ نہیں رہتی عمران خان سیاست میں رہیں، کوئی وجہ نہیں رہتی کہ عمران خان اپنے مخالفین پر حملے کریں، اب عمران خان کا ایجنڈا ہے لوگوں کو سڑکوں پر لا کر خون خرابہ کیا جائے، عمران خان نوجوان نسل کو سڑکوں پر لانا چاہتا ہے، نوجوانوں کو سڑکوں پر لانے کا اتنا ہی شوق ہے تو پہلے اپنے بیٹوں کو ملک واپس لاؤ۔

انہوں نے کہا کہ فارن فنڈنگ کیس اوپن اینڈ شٹ کیس ہے، اگر قانون سب کے لیے ایک ہے تو نہ صرف عمران خان نااہل پارٹی بھی کالعدم تصور ہوتی ہے، قانون کے مطابق اس کیس کو دیکھا جائے تو 7سال کی قید بنتی ہے۔

متعلقہ خبریں