جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

افغانستان کی قیادت ماضی بھول کر پاکستان پر اعتماد کرے : وزیر خارجہ

افغانستان کی قیادت

اسلام آباد : شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ افغانستان کی قیادت اور دیگر پاکستان پر اعتماد کریں اور ماضی بھول کر آگے بڑھیں۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے پاکستان افغانستان دو طرفہ مذاکرات کے افتتاحی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جنگ اور مفاہمت ایک ساتھ نہیں چل سکتے۔ پاکستان ایک پرامن ملک ہے اور دنیا کا نظریہ اب تبدیل ہوچکا ہے۔

انہوں نے کہا کہ امن سب کی خواہش ہے، افغانستان میں امن خطے کے مستقبل کے لیے اہم ہے۔ پاکستان پرامن ،خوشحال اور خودمختار افغانستان کا خواہاں ہے۔ پاکستان نے افغانستان میں قیام امن کے لیے ہرممکن اقدامات کیے۔

یہ بھی پڑھیں : پاکستان اور چین، افغانستان کی تعمیر نو میں اہم کردار ادا کر سکتے ہیں : وزیر خارجہ

ان کا کہنا تھا تھا کہ افغانستان میں قیام امن کے لیے پاکستان کی کوششوں کوعالمی سطح پر سراہا گیا۔ امریکا سمجھتا ہے کہ خطے کے مسائل کا حل پاکستان کی مدد سے ممکن ہے۔ آج افغانستان بدل چکا ہے، افغانستان کا مسئلہ سیاسی مذاکرات کے ذریعے ہی حل ہوسکتا ہے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ افغانستان کے قومی سلامتی مشیر کے بیان نے مایوس کیا۔ ایسے بیانیات امن کی کوششوں کو سبوتاژ کرسکتے ہیں۔ افغانستان کی قیادت اور دیگر پاکستان پر اعتماد کریں اور ماضی بھول کر آگے بڑھیں۔

متعلقہ خبریں