اگر شواہد نہیں تھے تو سو دن کس جرم میں قید رکھا : علیم خان

لاہور: تحریک انصاف پنجاب کے سینیئر رہنماء علیم خان نیب پر برہم ہوگئے، انہوں نے کہا کہ تفتیش کے مکمل ہونے تک جیل میں رکھنا، ایک بہت بڑا ظلم ہے۔

پی ٹی آئی رہنماء علیم خان نے پنجاب اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نیب پہلی تفتیش کرے،  پہلے کیس بنائے، اگر کوئی مجرم لگے تو ضرور پکڑیں، اگر میں نے ملک سے ایک روپے کی بھی کرپشن کی ہو تو، میں سیاست چھوڑ دوں گا۔

انہوں نے کہا کہ میرے خلاف سازش کرنے والوں سے اللہ خود حساب لے گا، قانون میں سقم ہے، تفتیش کے مکمل ہونے تک جیل میں رکھنا، ایک بہت بڑا ظلم ہے، اس بندے کے گھر والوں پر کیا گزرتی ہے، وہ وہی شخص جانتا ہے جو جیل میں ہوتا ہے۔

علیم خان نے کہا کہ حکومت سے اپیل کروں گا کہ نیب کے قوانین کو دیکھا جائے، اگر جنوری دوہزار اٹھارہ میں انویسٹی گئشن شروع ہوئی تو سترہ مہینے میں شواہد اکٹھے کیوں نہیں کیے گئے، کسی کے خلاف بھی اگر ایسی تحقیق ہوئیں ہیں تو وہ غلط ہے، اگر کیس نہیں تھا تو مجھے سو دن تک جیل میں کیوں رکھا گیا۔

Facebook
Facebook
YouTube
YouTube