جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

امریکا: پولیس نے ایک اور سیاہ فام شہری کی جان لے لی، مظاہروں کی نئی لہر شروع

سیاہ

اٹلانٹا: امریکا میں جورج فلائیڈ کی ہلاکت کے بعد پولیس نے ایک اور سیاہ فام شہری کی جان لے لی، ستائیس سالہ ریشرڈ بروکس کو اٹلانٹا میں پولیس نے گولی ماری دی، اس قتل کے بعد امریکا میں مظاہروں کی نئی لہر شروع ہو گئی ہے، واقعے پر خاتون پولیس چیف نےاستعفیٰ دے دیا۔

پولیس کا دعویٰ ہے کہ سیاہ فام شخص نے گرفتاری کے دوران مزاحمت کی اور مبینہ طور پر پولیس کا ٹیزر لے کر بھاگنے کی کوشش کی جس پر دو پولیس اہلکاروں میں سے ایک نے سیاہ فام شخص پر گولی چلا دی۔

زخمی بروکس کو اسپتال لے جایا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا۔

واقعے کے خلاف اٹلانٹا سمیت ریاست جارجیا میں مظاہروں کا سلسلہ شروع ہوگیا، مظاہرین نے شہرکی مرکزی شارع انٹراسٹیٹ کو بند کردیا، مشتعل مظاہرین نے املاک کو آگ لگا دی۔

پولیس کے ہاتھوں ایک اور سیاہ فام نوجوان کے قتل کے بعد اٹلانٹا پولیس کی سربراہ ایریکا شیلڈ نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔

جارجیا بیورو آف انویسٹی گیشن کا کہنا ہے کہ اٹلانٹا کے محکمہ پولیس سے ریشرڈ بروکس کو ہلاک کرنے سے متعلق تفصیلات طلب کرلی گئی ہیں۔

پولیس اہلکاروں کے ہاتھوں بروکس کی موت ایسے وقت ہوئی ہے جب امریکا میں جارج فلائیڈ کے قتل کے اور نسلی امتیاز کے خلاف مظاہرے کیے جارہے ہیں

پچھلے کچھ عرصے میں امریکہ میں کئی واقعات سامنے آئے ہیں جن میں پولیس اہلکاروں کی جانب سے سیاہ فام امریکیوں کو حراست میں لیتے ہوئے اتنی زیادہ طاقت استعمال کی گئی۔

متعلقہ خبریں