جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

وکلاء کی معافی مانگنے کیلئے ملاقات کی کوشش، چیف جسٹس ہائیکورٹ نے انکار کردیا

جسٹس نے انکار

اسلام آباد : وکلاء کی جانب سے آباد ہائی کورٹ حملے پر معافی مانگنے کیلئے چیف جسٹس سے ملنے کی کوشش کی گئی، جسٹس اطہر من اللہ نے انکار کردیا۔

اسلام آباد ہائیکورٹ بار اور وکلاء کی جانب سے ہائیکورٹ حملہ کے بعد حالات معمول پر لانے کی کوشش کی گئی۔ وکلاء چیف جسٹس بلاک آئے اور جسٹس اطہر من اللہ سے ملنے کی کوشش کی، تاہم چیف جسٹس نے ملنے سے انکار کردیا۔

اس موقع پر اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس بلاک کے باہر سیکیورٹی میں غیر معمولی اضافہ کردیا گیا اور پولیس اور ایلیٹ فورس کی بھاری نفری تعینات کی گئی۔

یہ بھی پڑھیں : اسلام آباد ہائی کورٹ میں توڑ پھوڑ کا الزام، پندرہ وکلاء مقدمے میں نامزد

وکلاء صدر ہائیکورٹ بار زاہد محمود راجہ کی قیادت میں جب چیف جسٹس بلاک پہنچے تو پولیس نے داخلے سے روک دیا، وفد میں جیل سے رہائی پانے والے وکلاء بھی شامل تھے۔

وکلاء نے کہا کہ ہم چیف جسٹس صاحب سے مل کر انہیں پھول پیش کرنا چاہتے ہیں۔ پولیس اہلکاروں نے کہا کہ رجسٹرار موجود نہیں، آپ فون پر رابطہ کریں، وکلاء نے کہا کہ اگر ملاقات نہیں کرتے تو یہ پھول صرف گیٹ پر رکھنے کی اجازت دی جائے۔ وکلاء کے اصرار پر پولیس اہلکاروں نے پھول لے کر چیف جسٹس بلاک کے دروازے پر رکھ دیئے۔

متعلقہ خبریں