جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

پیپلز پارٹی کا آصف زرداری کے علاج کیلئے پرائیویٹ میڈیکل بورڈ بنانے کا مطالبہ

پرائیویٹ میڈیکل بورڈ آصف زرداری

اسلام آباد : پیپلز پارٹی نے آصف زرداری کی صحت پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے پرائیویٹ میڈیکل بورڈ بنانے کا مطالبہ کردیا۔

پیپلز پارٹی نے آصف زرداری کے علاج کیلئے پرائیویٹ میڈیکل بورڈ بنانے کا مطالبہ کردیا ہے۔ پیپلز پارٹی نے آصف زرداری کی صحت کو لاحق خطرات کے باعث جیل حکام کو پرائیویٹ بورڈ کیلئے درخواست دے دی۔

پی پی پی نے پرائیویٹ میڈیکل بورڈ کا مطالبہ سرکاری ڈاکٹرز کے بورڈ کی سفارشات کی روشنی میں کیا۔ سرکاری ڈاکٹرز کے بورڈ نے رپورٹ آصف زرداری کی صحت کو لاحق سنجیدہ مسائل کی نشاندہی کی۔

یہ بھی پڑھیں : ہمارا نظام ظالم کا ساتھ دیتا ہے، مظلوم کا نہیں، ججز کے خلاف سازشیں ہورہی ہیں : بلاول بھٹو

پی پی کے لکھے گئے خط میں کہا گیا ہے کہ خاندان اور پارٹی کے اطمینان کیلئے پرائیویٹ ڈاکٹرز اور ماہرین کا بورڈ بنایا جائے۔ حکومت کے بنائے بورڈ نے آصف زرداری کی صحت کے حوالے سے خطرے کا اظہار کر دیا ہے۔

متن کے مطابق سرکاری بورڈ کے مطابق صدر زرداری کی شریانوں میں خون کا جمنا ان کی زندگی کیلئے خطرناک ہے۔ آصف زرداری کی شگر لیول بھی خطرناک حد تک اوپر نیچے ہو رہی ہے۔ شگر لیول کا کنٹرول نہ ہونا آصف زرداری کی زندگی کیلئے خطرناک ثابت ہو سکتا ہے۔

پی پی کی درخواست کے مطابق سرکاری بورڈ نے جیل میں ہڈیوں کی بیماری وجہ سے مناسب بستر نہ ملنے سے پیدا مسائل کا بھی ذکر کیا ہے۔ آرتھو بیڈنگ نہ ملنے کی وجہ سے آصف زرداری کی کمر کا دیرینہ مرض شدت اختیار کر گیا ہے۔

پی پی مؤقف کے مطابق سرکاری بورڈ نے اپنی رپورٹ میں صدر زرداری کے علاج کیلئے نیورولاجسٹ کی مدد لینے کی بھی سفارش کی ہے۔

بلاول بھٹو زرداری کے ترجمان مصطفیٰ نواز کھوکھر نے کہا ہے کہ علاج معالجے کی مناسب سہولت ہر شخص یا قیدی کا بنیادی حق ہے۔ قانون ہر شخص اور قیدی کے علاج معالجے کی ضمانت دیتا ہے۔ آصف زرداری کے علاج کا مطالبہ کوئی رعایت نہیں بلکہ قانونی حق ہے۔

متعلقہ خبریں