جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

برطانیہ میں فراڈ کرکے پاکستان آنے والے ملزمان کے 50 ارب کے اثاثے منجمد

برطانیہ میں فراڈ

اسلام آباد : برطانیہ میں فراڈ کرکے پاکستان آنے والے ملزمان کے 50 ارب کے اثاثے منجمد کردیئے گئے۔

احتساب عدالت اسلام آباد میں برطانیہ میں 6 کروڑ پاؤنڈ مارٹگیج فراڈ کیس کی سماعت ہوئی۔ عدالت نے اہم فیصلہ جاری کردیا۔

احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے نیب کی جانب سے برطانیہ میں فراڈ کرکے پاکستان آنے والے ملزمان کے منجمد کیے گئے 50 ارب کے اثاثوں کے عمل کی توثیق کردی۔

یہ بھی پڑھیں : 10 ارب درخت منصوبہ، دنیا کو پاکستان کی پیروی کرنی چاہیے : برطانوی وزیراعظم

نثار افضل، صغیر افضل کے تمام اہلخانہ اور رشتہ داروں کے اثاثے منجمد کرنے کی منظوری دے دی گئی۔ عدالت نے فیصلے میں کہا کہ ملزمان کا اثاثے فروخت کرنے کا امکان ہے، فوری طور پر تمام اداروں کو آگاہ کیا جائے۔ نیب کے مطابق ٹھوس شواہد ہیں کہ ملزمان نے ناجائز اثاثے بنائے۔

منجمد کیئے گئے اثاثوں میں اسلام آباد کے پوش علاقے ایف سیکٹر میں 11 بنگلے، ترنول، بھڈانہ، تمیر میں 650 کنال اراضی، اٹک، فتح جنگ اور رنگ روڈ کے اطراف 10 ہزار کنال اراضی شامل ہے۔

نیب کے مطابق ملزم نثار افضل اربوں روپے کے اثاثے بنانے کا کوئی ثبوت فراہم نہ کرسکا۔

متعلقہ خبریں