بابری مسجد پر سمجھوتہ نہیں کریں گے : آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ

نئی دہلی : آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ نے کہا ہے کہ رام مندر تنازعہ کی لڑائی مضبوطی کے ساتھ لڑی جائے گی۔

بورڈ کے جنرل سیکرٹری مولانا ولی رحمانی کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ بابری مسجد کے بدلے میں کوئی چیز نہیں لی جائے گی۔ ثالثی کمیٹی سے بات چیت میں بورڈ اس لئے شامل ہوا کیونکہ اس کو سپریم کورٹ نے تشکیل دیا تھا۔

عرب میڈیا میں خبر شائع ہوئی تھی کہ ایودھیا تنازعہ کے مقدمے میں مسلم فریق سمجھوتہ پر غور کررہا ہے۔ بورڈ نے اس خبر کو مسترد کرتے ہوئے واضح کردیا ہے کہ وہ مقدمہ لڑنے کیلئے پوری طرح تیار ہے اور کسی طرح کے سمجھوتے کی بات نہیں سوچی جارہی ہے۔

واضح رہے کہ بھارت میں تاریخی بابری مسجد کی شہادت 6 دسمبر 1992 کو ہوئی تھی جب انتہا پسند ہندوؤں کے ٹولے نے تمام قانونی، سماجی و اخلاقی اقدار پامال کرتے ہوئے تاریخی بابری مسجد شہید کردی تھی۔