جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

بلوچستان حکومت کا اٹھارہ لاکھ سے زائد خاندانوں کو ہیلتھ کارڈ دینے کا فیصلہ

اٹھارہ لاکھ سے زائد

کوئٹہ : بلوچستان حکومت نے اٹھارہ لاکھ سے زائد خاندانوں کو ہیلتھ کارڈ دینے کا فیصلہ کرلیا، جس کے تیکنیکی امور حتمی مراحل میں ہیں۔

پارلیمانی سیکریٹری صحت بلوچستان ڈاکٹر ربابہ خان بلیدی نے جاری بیان میں کہا ہے کہ غریب افراد اور کم آمدنی والے گھرانوں کے لئے بلوچستان ہیلتھ کارڈ کا اجراء جلد کردیا جائیگا۔ منصوبے کو قابل عمل بنانے کے لیے  تیکنیکی امور حتمی مراحل میں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بلوچستان کے اٹھارہ لاکھ سے زائد مستقل رہائشی خاندانوں کو سالانہ دس لاکھ روپے تک سرکاری اخراجات پر پاکستان کی نامور نجی و سرکاری اسپتالوں میں علاج معالجہ کی سہولت دستیاب ہوگی۔

یہ بھی پڑھیں : پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کا طلباء پر لاٹھی چارج کا نوٹس لینے کا مطالبہ

ان کا کہنا تھا کہ کارڈ دہندگان اس سہولت کے تحت تمام اقسام کے کینسر، امراض گردہ و مثانہ بشمول ڈائیلاسز و پیوند کاری، چھاتی کے سرطان کی اسکریننگ، شوگر، امراض قلب و شریان، نیورو سرجری ، پروستھیٹکس،  اتفاقی حادثات سمیت ہر قسم کی ایمرجنسی میں اپنا علاج معالجہ سرکاری اخراجات پر معیاری اسپتالوں سے کراسکتے ہیں۔

پارلیمانی سیکریٹری نے کہا کہ سوشل ہیلتھ پروٹیکشن انیشیٹیو کے تحت یہ منصوبہ صحت عامہ کا وہ تاریخ ساز منصوبہ ہے، جس کے ثمرات براہ راست غریب اور عام آدمی کو ملیں گے۔

متعلقہ خبریں