جی ٹی وی نیٹ ورک
دنیا

برطانیہ آئندہ ماہ یورپی یونین چھوڑ دے گا: بورس جانسن

برطانیہ

لندن: برطانیہ کے تاریخی انتخابات میں واضح اکثریت حاصل کرانے والی جماعت کنزرویٹو پارٹی کے رکن اور سابق وزیراعظم بورس جانسن کا کہنا ہے کہ عوام نے یہ مینڈیٹ یورپی یونین سے نکلنے کے لیے دیا ہے اس لیے برطانیہ آئندہ ماہ یورپی یونین چھوڑ دے گا۔

انتخابات میں اب تک کے نتائج کے مطابق سابق حکمران جماعت کنزرویٹو پارٹی کو 364 جب کہ بریگزٹ کی مخالف لیبر پارٹی کو 202 نشستوں پر کامیابی حاصل ہوئی۔

سابق برطانوی وزیراعظم بورس جانسن کا کہنا ہے کہ عوام نے انہیں یورپی یونین سے نکلنے کے لیے واضح مینڈیٹ دے دیا ہے اور یہ کہ وہ عوام کے اعتماد پر پورا اُترنے کے لیے دن رات کام کریں گے۔

عام انتخابات کے موقع پر برطانوی وزیراعظم بورس جانسن کی کنزرویٹو پارٹی اور جیریمی کوربن کی لیبر پارٹی کے درمیان مقابلہ ہے۔

کنزرویٹو پارٹی بریگزیٹ کی حامی جب کہ لبرل پارٹی اس کی مخالف ہیں اور دونوں کی انتخابی مہم بھی اسی نقطے کے گرد رہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: برطانوی انتخابات کا بڑا معرکہ حکومتی جماعت کنزرویٹو پارٹی نے جیت لیا

صدر یورپی یونین کونسل چارلس مائیکل کا کہنا ہے کہ وہ برطانیہ سے تجارتی مذاکرات کے لیے تیار ہیں۔

چارلس مائیکل نے کہا کہ وہ یورپی ترجیحات کے تحفظ کے لیے پوری کوشش کریں گے۔ "میرا نقطہ نظر بالکل واضح ہے کہ ہم تیار ہیں، ہم نے اپنی ترجیحات کا فیصلہ کرلیا ہے”۔

متعلقہ خبریں