جی ٹی وی نیٹ ورک
دنیا

چین ہمارا اہم پارٹنر ہے اور اس کی سرمایہ کاری پر ہمارا انحصار ہے : طالبان

china-is-our-main-partner-and-we-depend-on-its-investment-the-taliban

طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد کا کہنا تھا کہ ملک کا کنٹرول حاصل کرنے اور غیر ملکی افواج کے انخلا کے بعد بنیادی طور پر چین کی سرمایہ کاری پر انحصار کرے گا۔

 

ایک اخبار کو انٹرویو دیتے ہوئے ذبیح اللہ مجاہد نے کہا کہ طالبان، معاشی ترقی کے لیے چین کی مدد سے آگے بڑھے گا۔

طالبان نے افغانستان کے دارالحکومت کابل پر 15 اگست کو قبضہ کر لیا تھا جبکہ معاشی طور پر تباہی اور بھوک و افلاس کے خدشات کے ساتھ 31 اگست کو افغانستان میں 20 سالہ مغربی جنگ کا خاتمہ ہوگیا تھا۔

 

یہ بھی پڑھیں : طالبان کا جلال الدین حقانی کو خراج تحسین، بدری 313 کا تعارف

 

ایک رپورٹ کے مطابق طالبان ترجمان نے انٹرویو میں کہا ہے کہ چین ہمارا سب سے اہم شراکت دار ہے اور ہمارے لیے بنیادی اور غیر معمولی موقع کی نمائندگی کرتا ہے کیونکہ یہ ہمارے ملک میں سرمایہ کاری اور تعمیر نو کے لیے تیار ہے۔

انہوں نے کہا کہ چین کے نئے سلک روڈ منصوبے کو طالبان کی طرف سے انتہائی عزت کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے۔

اس انفرا اسٹرکچر منصوبے کے ذریعے چین، تجارتی روٹس کھول کر اپنا عالمی اثر و رسوخ بڑھانا چاہتا ہے۔

ذبیح اللہ مجاہد کا کہنا تھا کہ ملک میں بہترین تانبے کی کانیں ہیں جنہیں چین کی مدد سے جدید اور قابل استعمال بنایا جاسکتا ہے، اس کے علاوہ چین دنیا بھر کی مارکیٹس تک رسائی کے لیے ہمارےپاس ہے۔

متعلقہ خبریں