جی ٹی وی نیٹ ورک
پاکستان

یہ الٹے لٹک جائیں تو بھی تین ماہ میں سرکلر ٹرین نہیں چلا سکتے : فردوس شمیم نقوی

سرکلر ٹرین نہیں

کراچی : فردوس شمیم نقوی نے کہا ہے کہ یہ الٹے لٹک جائیں تو بھی تین ماہ میں سرکلر ٹرین نہیں چلا سکتے، اگر گھروں کو توڑا گیا تو ہم تمام ایم پی ایز سامنے کھڑے ہونگے۔

سٹی ریلوے اسٹیشن کے باہر تحریک انصاف کے رہنماء اور سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر فردوس شمیم نقوی نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ریلوے نے ابھی تک کوٸی پلان ہی نہیں بنایا ہے۔

فردوس شمیم نقوی نے کہا کہ ہم یہ سمجھنے آئے تھے کہ محکمہ ریلوے تجاوزات کے لئے کیا کرسکتا ہے۔ یہ الٹے لٹک جائیں تو بھی تین ماہ میں سرکلر ٹرین نہیں چلا سکتے۔ میں عدالت جاکر صورتحال واضع کروں گا۔

یہ بھی پڑھیں : سپریم کورٹ کا کراچی سرکلر ریلوے کو تین ماہ میں آپریشنل کرنے کا حکم

ان کا کہنا تھا کہ کراچی کے حوالے سے ہر وہ فیصلہ ہونا چاہیے کہ جو شہر کے لیے بہتر ہے پر کسی کو بے گھر کرنا نا انصافی ہے۔ابھی تک ریلوے نے نشانات نہیں لگے کہ کون کون سے مقامات گھرانے ہیں۔

اپوزیشن لیڈر سندھ نے کہا کہ عدالت کا حکم ہے کہ متاثرہ افراد کو متبادل فراہم کریں۔ حکام نے نہ تو متاثرین کی بحالی کی جگہ بتائی نہ تفصیلات ۔ جائیکا ڈیزائن کے مطابق ریل چلانے میں تقریبا چار سال درکار ہیں۔

پی ٹی آئی رہنماء نے کہا کہ تمام منظور کاکائوں کو پکڑا جائے پھر لوگوں کو اپنے گھروں سے ہٹائیں۔ منصوبوں پر دستخط کرنے والوں کو سزا ملنی چاہئے الاٹیز کو نہیں، عدالتیں انصاف کریں لوگوں کو بے گھر ہونے سے بچائیں۔

ان  کا کہنا تھا کہ محکمہ ریلوے کو کتنی زمین درکار ہے، کوئی جواب دہی کو تیار نہیں۔ اگر گھروں کو توڑا گیا تو ہم تمام ایم پی ایز سامنے کھڑے ہونگے۔

متعلقہ خبریں