جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

کورونا کے مریض کا 13 دن کا بل ساڑھے 17 لاکھ روپے : خدارا نجی شعبوں کو بھی لگام دیں : فخر عالم

17 لاکھ

کراچی : ايک نجی اسپتال نے کورونا کے مريض کا 13 دن میں 17 لاکھ روپے بل بنا ڈالا۔ فخر عالم نے حکمرانوں سے ہاتھ جوڑ کر اپيل کی کہ خدارا نجی شعبے کو بھی لگام ديں۔

گلوکار فخر عالم نے ٹوئٹر پر اسپتال کا بل شيئر کرتے ہوئے حکمرانوں سے ہاتھ جوڑ کر اپيل کی کہ خدارا نجی شعبے کو بھی لگام ديں۔

فخر عالم کا کہنا ہے کہ مبینہ طور پر آغا خان اسپتال نے ایک مریض پر 300 جراثیم کش پیڈز استعمال کئے۔ جراثیم کش پیڈز انجکشن لگانے سے پہلے استعمال کیا جاتا ہے۔ ایک مریض سے 1800 گلوز اور پی پی ای کی قیمت چارج کی گئی۔

انہوں نے بتایا کہ ساڑھے 17 لاکھ کے بل ميں مريض کے کپڑے اور جوتے رکھنے والی تھيلے کے پيسے بھی الگ سے چارج کيے گئے۔

فخر عالم نے کہا کہ پرائیویٹ اسپتالوں میں علاج اور چارجز کو دیکھنے والا کیا کوئی ریگولیٹر نہیں، ماناکہ يہ پرائيوٹ ادارہ ہے ليکن کوئی تو قانون سازی ہونی چاہيئے، يہ ہيلتھ کميشن اور پارليمنٹ ميں جانا چاہيئے۔

یہ بھی پڑھیں : وزیر اعظم کا لاہور میں کورونا ایس او پیز کی پابندیاں مزید سخت کرنے کا حکم

گلوکار کا کہنا تھا کہ مریض کے اہل خانہ نے مجھے بتايا ڈاکٹر وارڈ ميں آتے تھے، تمام مريضوں کو ايک ہی مخصوص سوٹ پہن کرچيک کرتے تھے تو پھر اِتنے پی پی ای سوٹس، ماسک کيسے چارج ہوگئے، وہ بھی عام قیمت سے کہيں زيادہ۔

فخر عالم نے خدشہ ظاہر کيا کہ جس رفتار سے کورونا کے مريضوں کی تعداد بڑھ رہی ہے، اگر نجی اسپتالوں کو لگام نہ دی گئی تو غريب کا اللہ ہی حافظ ہے۔

متعلقہ خبریں