جی ٹی وی نیٹ ورک
دنیا

کورونا وائرس کو مقامی بیماری کے طور پر لینا چاہیے : اسپین اور برطانیہ کی نئی سوچ

مقامی بیماری

میڈرڈ : اسپین کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس کو مقامی بیماری کے طور پر لینا چاہیے، انسانیت موسمی فلو کی طرح رہ سکتی ہے۔

جہاں دنیا بھر میں حکومتیں کورونا وائرس سے نمٹنے کے لیئے کوششیں کررہی ہیں، وہیں اسپین نے عالمی ادارہ صحت کی مخالفت کے باوجود دنیا کو کہا ہے کہ کورونا وائرس کا موسمی نزلے کی طرح علاج کیا جائے۔

اسپین کی بائیں بازو کی حکومت کوویڈ کو ایک مقامی بیماری کے طور پر لینا چاہتی ہے، جس میں ان کا مؤقف ہے کہ انسانیت کورونا وائرس کے ساتھ موسمی فلو کی طرح رہ سکتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : کورونا سے اموات میں اچانک بڑا اضافہ، یومیہ تعداد پانچ سے 23 افراد تک جا پہنچی

ادھر برطانیہ نے بھی کورونا وائرس کو روکنے والی پابندیوں کو ختم کرنے کا اعلان کر رکھا ہے۔ برطانیہ کے وزیر صحت کا کہنا ہے کہ ہمیں کوویڈ کے ساتھ جینا سیکھنا چاہیے۔ حکومت چند مہینوں میں کورونا وائرس کے ساتھ رہنے کے لیے ایک طویل المدتی منصوبہ مرتب کرے گی۔

دوسری طرف عالمی ادارہ صحت کے سربراہ نے اس سوچ کو یکسر مسترد کیا ہے اور کہا ہے کہ اب بھی وائرس کی نئی قسم سامنے آسکتی ہے۔

ڈبلیو ایچ او کے ایمرجنسی ڈائریکٹر کا کہنا ہے کہ اس مرحلے پر کوویڈ 19 کو ایک مقامی بیماری کے طور پر علاج کرنے کی بات "جھوٹی امید پیدا کر رہی ہے”۔

متعلقہ خبریں