جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

کورونا وائرس کے پھیلاؤ پر مبینہ غفلت، عدالت نے وفاقی حکومتی سے جواب طلب کر لیا

پھیلاؤ پر معمولی جرائم نیب اختیارات

اسلام آباد : مبینہ غفلت سے کورونا وائرس کے پھیلاؤ پر اسلام آباد ہائیکورٹ نے وفاقی حکومتی سے جواب طلب کر لیا۔ کیس کی سماعت ایک ہفتے کے لیے ملتوی کردی گئی۔

کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے پر غفلت برتنے پرعدالت نے سول سوسائٹی کی درخواست پر وفاق کو نوٹس جاری کر دیا۔ اسلام آباد ہائی کورٹ نے وزیراعظم کے پرنسپل سیکرٹری اور زلفی بخاری کو بھی نوٹس جاری کر دیا۔

جسٹس عامر فاروق نے سول سوسائٹی کی جانب سے دائر درخواست پر سماعت کی۔ درخواست گزار نے عدالت سے درخواست کی کہ عدالت معاملے کی انکوائری کے لئے جوڈیشل کمیشن تشکیل دینے کے احکامات جاری کرے۔

درخواست گزار کے مطابق ایران سے مزید ہزاروں زائرین کو فیصل آباد اور جھنگ لایا جا رہا ہے، زائرین کو فیصل آباد اور جھنگ رکھنے سے مزید وائرس کے پھیلاؤ کا خدشہ ہے، عدالت زائرین کو کسی ویران جگہ پر منتقل کرنے کے احکامات جاری کرے۔

یہ بھی پڑھیں : کورونا وائرس کیخلاف جنگ اکیلے نہیں جیتی جا سکتی : وزیراعظم

درخواست گزار نے مزید کہا کہ تفتان میں زائرین کے لیے فوری عمارت تعمیر کرنے کے احکامات دیئے جائیں، حکومت ایران کو قائل کرنے میں ناکام رہی کہ زائرین کو ابھی واپس نہ بھیجا جائے، تفتان بارڈر کو فوری طور پر سیل کرنے کا حکم دیا جائے۔

درخواست گزار نے استدعا کی کہ تفتان بارڈر پر زائرین کے لیے فوری عمارت تعمیر کرکے انہیں وہاں رکھنے کا حکم دیا جائے، عوام کو فوری طور پر ماسک اور سینیٹائزرز مہیا کرنے کا حکم دیا جائے۔

جس پر جسٹس عامر فاروق نے کہا کہ حکومت سے پوچھ لیتے ہیں کہ تفتان سے آنے والوں کو کہاں رکھا ہے؟ قرنطینہ میں رکھنے کا مقصد ہی انہیں الگ رکھنا ہے، حکومت سے پوچھ لیتے ہیں کہ یہ مراکز کہاں کہاں قائم کیے ہیں؟ سماعت ایک ہفتے کے لئے ملتوی کردی گئی۔

متعلقہ خبریں