جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

ڈسکہ انتخابات : الیکشن کمیشن ذمہ داروں کو نشان عبرت بنائے گا : احسن اقبال

الیکشن کمیشن ذمہ داروں کو

اسلام آباد : احسن اقبال کا کہنا ہے کہ ڈسکہ کے انتخابات، الیکشن کمیشن کے لیے چیلنج ہے، الیکشن کمیشن اسے ٹیسٹ کیس بنا کر ذمہ داروں کو نشان عبرت بنائے گا۔

وکلاء کی ہڑتال پندرہویں روز میں داخل ہوگئی۔ احتساب عدالت اسلام آباد میں نارووال اسپورٹس سٹی اسکینڈل کیس کی سماعت ہوئی۔ سابق وزیر داخلہ احسن اقبال عدالت کے روبرو پیش ہوئے۔

سابق وزیر داخلہ کے وکیل ہڑتال کے باعث پیش نہ ہوسکے۔ کیس کی سماعت بغیر کارروائی کے 10 مارچ تک ملتوی کر دی گئی۔

مسلم لیگ ن کے سیکریٹری جنرل اور سابق وفاقی وزیر احسن اقبال نے احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ان جھوٹے بے بنیاد مقدموں کا مقصد کردار کشی کا موقع فراہم کرنا ہے۔ آج تک ایک پیسے کی کرپشن کا کوئی ثبوت پیش نہیں کیا جا سکا۔

انہوں نے کہا کہ پانچ سالوں میں 32 سو ارب روپے کا ترقیاتی بجٹ منظور کیا جو ریکارڈ ہے۔ دفاع اور ترقیاتی کاموں پر ایک، ایک ہزار ارب روپے سے زائد خرچ کیے۔ پاکستان کی ڈویلپمنٹ کو بھی پاکستان کے دفاع کا ذریعہ سمجھتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : ڈسکہ الیکشن : عملہ فارغ بیٹھا تھا مگر پولنگ اسٹیشن کے دروازے بند رکھے گئے : مریم نواز

ان کا کہنا تھا کہ ہماری فوج صرف گولہ بارود یا میزائلوں سے جنگ نہیں جیت سکتی۔ جنگ جیتنے کے لیے مضبوط فوج کے ساتھ توانا قوم کی بھی ضرورت ہے۔ خالی بندوقوں اور ٹینکوں سے دفاع ناقابل تسخیر نہیں ہو سکتا۔

احسن اقبال نے کہا کہ روم کے پاس سب سے بڑی فوج تھی مگر ڈاؤن فال اس وقت شروع ہوا جب وہ اپنی فوج کو تنخواہوں کے پیسے نہ دے سکی۔ پاکستانی افواج نے لازوال قربانیاں دیں اور سیکورٹی کی صورتحال کو بہتر بنایا ہے۔

لیگی رہنماء کا کہنا تھا کہ اگر عوام میں مایوسی بڑھ جائے تو معاشرے میں انتہا پسندی زور پکڑتی ہے۔ مہنگائی اور بے روزگاری کی لہر کا رخ نہیں موڑا تو سیکورٹی کے میدان میں حاصل کامیابیاں بھی ختم ہو سکتی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پنجاب کو ایک زمانے میں مثالی صوبہ کہا جاتا تھا، جہاں انتظامیہ میرٹ پر کام کرنے کی پہچان تھی، آج اسے بھی بدنام کر دیا گیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پنجاب میں جس طرح الیکشن چرانے کی کوشش کی گئی۔ ڈسکہ کے انتخابات، الیکشن کمیشن کے لیے چیلنج ہے، جس کی اتھارٹی کو چیلنج کیا گیا۔ پولیس گردی اور انتظامیہ گردی کا مظاہرہ کیا گیا۔ الیکشن کمیشن اسے ٹیسٹ کیس بنا کر ذمہ داروں کو نشان عبرت بنائے گا۔

متعلقہ خبریں