جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

امریکہ میں کشمیری حریت رہنما یاسین ملک اور خرم پرویز کی رہائی کیلئے ڈیجیٹل مہم

خرم پرویز

واشنگٹن : امریکا کے دارالحکومت واشنگٹن میں پابند سلاسل کشمیری حریت رہنما یاسین ملک اور خرم پرویز کی رہائی کیلئے مظاہرے کیئے گئے۔ ڈیجیٹل اشتہاری ٹرکوں کے ذریعے دونوں رہنماؤں کی رہائی کا مطالبہ بھی کیا گیا۔

ڈیجیٹل اشتہاری مہم کے دوران کشمیر کی تازہ ترین صورتحال کی تصاویر کی تشہیر کرتے یہ ٹرک واشنگٹن کی اہم شاہراہوں پر پائے جارہے ہیں۔

ٹرکوں کی الیکٹرانک اسکرینوں پر پیغامات درج ہیں کہ ’’خرم پرویز دہشت گرد نہیں، انسانی حقوق کے محافظ ہیں‘‘ ’’کشمیر میں نسل کشی بند کرو‘‘ ’’یاسین ملک عدم تشدد کی راہ پر گامزن ہیں‘‘

ڈبلیو کے اے ایف کے صدر ڈاکٹر جی این میر نے بھارتی تحقیقاتی ادارے این آئی اے کے ذریعے خرم پرویز کی نظربندی کی مذمت کی۔ انہوں نے کہا کہ خرم پرویز کو 2022 میں امریکی جریدے ٹائم نے دنیا کے 100 بااثر ترین افراد میں سے ایک قرار دیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں : امریکہ : طیارے میں لینڈنگ کے بعد آگ لگنے سے تین افراد زخمی

ان کا کہنا تھا کہ اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے ہائی کمشنر کشمیری حریت پسندوں کی بھارت جیلوں سے رہائی کیلئے کردار ادا کریں۔

سیکریٹری جنرل ڈبلیو کے اے ایف ڈاکٹر غلام نبی فائی نے کہا کہ بھارت مقبوضہ علاقے میں انسانیت کے خلاف سنگین جرائم کر رہا ہے۔ فاشسٹ بھارتی حکومت کا مقصد یاسین ملک کو بدنام زمانہ تہاڑ جیل میں ختم کرنا ہے۔

متعلقہ خبریں