جی ٹی وی نیٹ ورک
ٹیکنالوجی

ڈونلڈ ٹرمپ کا بند کیا جانے والے اکاؤنٹ 12 سال قبل بنایا گیا تھا

اکاؤنٹ

ٹوئٹر کے علاوہ فیس بک اور دیگر سوشل ویب سائٹس بھی ڈونلڈ ٹرمپ کی نفرت انگیز پوسٹس کو ڈیلیٹ کرتی آ رہی تھیں، تاہم دیگر ویب سائٹس نے ان کے اکاؤنٹ کو تاحال مستقل بنیادوں پر بند نہیں کیا

ٹوئٹر انتظامیہ نے حال ہی میں امریکی دارالحکومت کے اہم ترین علاقے کیپیٹل ہل میں ہونے والے ہنگاموں سے متعلق نفرت انگیز مواد شیئر کرنے پر ڈونلڈ ٹرمپ کا ٹوئٹر اکاؤنٹ بند کیا۔

ٹوئٹر انتظامیہ نے بتایا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ کے بنائے گئے اصولوں کی خلاف ورزی کی بنا پر ان کا اکاؤنٹ بند کیا جا رہا ہے۔
ڈونلڈ ٹرمپ نے سیاستدان میں آنے سے قبل ہی مذکورہ اکاؤنٹ کو مئی 2009 میں بنایا تھا اور انہوں نے اس کا بہترین استعمال کرتے ہوئے اپنے کئی مقاصد پورے کیے۔

ڈونلڈ ٹرمپ کے بند کیے اکاؤنٹ سے گزشتہ 12 سال میں 57 ہزار ٹوئٹس کی گئیں، جن میں سے آخری 5 سال میں کی جانے والی زیادہ تر ٹوئٹس پر انہیں دنیا بھر میں تنقید کا نشانہ بھی بنایا گیا۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے 2016 میں امریکی عہدہ صدارت سنبھالنے کے بعد ٹوئٹر پر سیاسی مقاصد کے لیے زیادہ تر نفرت انگیز یا دوسروں کی دل آزاری کرنے والی ٹوئٹس کی تھیں۔

نفرت انگیز، تشدد پر ابھارنے والی، غلط معلومات اور دوسروں کی دل آزاری کرنے والی ٹوئٹس کرنے پر ٹوئٹر انتظامیہ نے گزشتہ 5 سال میں ڈونلڈ ٹرمپ کی درجنوں ٹوئٹس کو ڈیلیٹ یا ہذف بھی کیا تھا۔

ٹوئٹر کی جانب سے ڈونلڈ ٹرمپ کا اکاؤنٹ ایک ایسے وقت میں بند کیا گیا ہے جب کہ وہ امریکا کے 45 ویں صدر کے طور پر اپنے آخری ایام مکمل کر رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:کیپیٹل ہل پر حملہ : ڈونلڈ ٹرمپ کے مواخذے کیلئے مسودہ تیار

ڈونلڈ ٹرمپ رواں ماہ 20 جنوری کو عہدہ صدارت سے الگ ہوجائیں گے، ان کی جگہ 79 سالہ جوبائیڈن 46 ویں صدر کی ذمہ داریاں سنبھالیں گے۔

ڈونلڈ ٹرمپ کو نومبر 2020 میں ہونے والے انتخابات میں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا اور انہوں نے اپنی شکست کو بھی حال ہی میں تسلیم کیا، اس سے قبل وہ انتخابات میں دھاندلی کی باتیں کرتے آ رہے تھے۔

متعلقہ خبریں