دنیا آزاد کشمیر کا نفسیاتی کنٹرول حاصل کرنے کے بھارتی بیانات کا نوٹس لے : ڈاکٹر فیصل

بھارتی بیانات

اسلام آباد: دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر فیصل کا کہنا ہے کہ دنیاآزادکشمیرکانفسیاتی کنٹرول حاصل کرنےکے بھارتی بیانات کانوٹس لے ، پاکستان امن کاخواہشمند ہے مگر جارحیت کا بھرپور جواب دینے کےلیےتیار ہے۔

تفصیلات کے مطابق دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر فیصل نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ بھارتی وزیر کا بیان انسانی حقوق کی پامالی سےتوجہ ہٹانےکی کوشش ہے، بھارت نےمقبوضہ کشمیرمیں کی سب سےبڑی جیل میں تبدیل کررکھاہے۔ انسانی حقوق کی خلاف ورزی بھارت کی ریاستی دہشت گردی کا ثبوت ہے۔

ڈاکٹر فیصل کا کہنا تھا کہ انسانی حقوق کی خلاف ورزی بھارت کی ریاستی دہشت گردی کاثبوت ہے، بھارت ایسے اقدامات سے عالمی برادری کی توجہ نہیں ہٹا سکتا۔

ترجمان نے کہا کہ بھارت انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کی تاویلیں پیش کر رہا ہے، بھارت میں شرمناک طریقوں سےاقلیتوں کے خلاف اقدامات کیےجاتے ہیں، گائے کو دبوچنے کے الزامات میں لوگوں پرہجوم میں تشدد کیا جاتا ہے،ترجمان

یہ بھی پڑھیں : آزاد کشمیر کو بھارتی فوج کا قبرستان بنادیں گے : وزیراعظم آزاد کشمیر

ان کا کہنا تھا کہ اقلیت کےخلاف اورکشمیرمیں جارحیت بھارت کااصل چہرہ واضح کرتےہیں، دنیا آزاد کشمیر کا نفسیاتی کنٹرول حاصل کرنے کے بھارتی بیانات کا نوٹس لے، ایسے بیانات صورتحال کو مزید پیچیدہ اورخراب کریں گے۔

ڈاکٹر فیصل نے مزید کہا کہ پاکستان امن کاخواہشمند ہے مگر جارحیت کا بھرپور جواب دینے کےلیےتیار ہے۔

گزشتہ روز پاکستان نے بھارت کے بے بنیاد الزامات کومسترد کر دیا تھا، ترجمان دفترخارجہ نے کہا تھا کہ بے بنیاد الزامات سے بھارت کشمیریوں کیخلاف جرائم سے توجہ نہیں ہٹاسکتا ہے، بھارت مسئلہ کشمیر کو یو این قراردادوں کے مطابق حل کرے اور مقبوضہ وادی میں فوری مظالم بند کرائے۔

ڈاکٹر فیصل کا کہنا تھا کہ پاکستان امن کا حامی ہے، کسی جارحیت کا فوری جواب دے گا، بھارتی غیر ذمہ دارانہ بیان خطے کے امن کیلئے خطرہ ہیں، نام نہاد جمہوریت کا حامل بھارت 70 سال سے سنگین جرائم کررہا ہے۔

ترجمان نے مزید کہا تھا کہ بھارت دنیا کا وہ ملک ہے، جو اقلیتوں کیخلاف جرائم کو فروغ دے رہا ہے، ڈھٹائی سے کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں کر رہا ہے اور مقبوضہ وادی میں ریاستی دہشت گردی کا مرتکب ہورہا ہے۔