جی ٹی وی نیٹ ورک
انٹرٹینمنٹ

نامور ہیرو اور ویلن اسلم پرویز کو ہم سے بچھڑے 36 برس بیت گئے

اسلم

لاہور: فلموں کے نامور اداکار اسلم پرویز کو مداحوں سے بچھڑے 36 برس بیت گئے، وہ پاکستان کے پہلے ہیرو ولن اداکار تھے، ان کی اداکاری کے نقوش آج بھی پر ستاروں کو ان کی یاد دلاتے ہیں۔

اداکار اسلم پرویز نے اپنے فنی کیرئر کا آغاز تو چھوٹے کرداروں سے کیا مگر جلد ہی حسن طارق کی فلم نیند میں انہوں نے ایک ایسا کردار ادا کیا کہ وہ راتوں رات فلمی دنیا کی ضرورت بن گیے۔

وہ کردار ہیرو + ولن کا تھا جس کے بعد انہوں نے پلٹ کر نہیں دیکھا، اسلم پرویز نے ہیرو کے کردار چھوڑ کر ولن کے کرداروں کے لیے اپنی جگہ پکی کرلی۔

اسلم پرویز لاہور کی ایک پڑھی لکھی فیملی کے چشم و چراغ تھے، وہ خوش شکل ہونے کے ساتھ ساتھ خوک پوشاک اور رحم دل بھی تھے۔

یہ بھی پڑھیں: انقلابی شاعر فیض احمد فیض کی چھتیسویں برسی آج منائی جا رہی ہے

ان کی مشہور فلموں میں بہاروں پھول برساؤ، رواج، شکوہ، دامن، قتل کے بعد، پائل کی جھنکار، بہن بھائی، انسان اور آدمی، چھو منتر، پاٹے خان سیمت دیگر نام شامل ہیں۔

اسلم پرویز لاہور میں ایک مشہور کرکٹ کلب کے سرپرست اعلی بھی تھے اور خودبھی اچھی کرکٹ کھیلتے تھے وہ اپنے دوست اقبال حسن کے ساتھ فلم کی شوٹنگ سے واپس لاہور آرہے تھے کہ ایک کار حادثے میں شدید زخمی ہوگئے اور 21 نومبر 1984 کو جہاں فانی سے رخصت ہوگئے وہ لاہور کے قبرستان میں سپردخاک ہیں۔

متعلقہ خبریں