جی ٹی وی نیٹ ورک
انٹرٹینمنٹ

فلم "زندگی تماشا” روکنے کی کوشش، سرمد کھوسٹ کا وزیراعظم کو خط

زندگی تماشا

فلمساز سرمد سلطان کھوسٹ نے اپنی فلم "زندگی تماشا” کی ریلیز میں پیدا ہونے والی رکاوٹوں کے لیے وزیر اعظم عمران خان کو کھلا خط لکھ دیا۔

فلمساز سرمد کھوسٹ نے ٹوئٹر پر ایک کھلا خط لکھا جس میں انہوں نے صدر پاکستان، وزیر اعظم، آرمی چیف، چیف جسٹس آف پاکستان اور وزیراطلاعات کو مخاطب کیا۔

انہوں نے لکھا کہ 24 جنوری کو ان کی فلم "زندگی تماشا” کی ریلیز مقرر کی گئی تھی تاہم 2.5 منٹ دورانیہ کے ٹریلر کو دیکھ کر مفروضوں کی بنیاد پر فلم کے مصنف، پروڈیوسر اور میرے خلاف بھی "شکایت” درج کی گئی ہے جبکہ فلم کو تینوں سنسر بورڈز نے پاس کردیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ قانون کا پابند شہری کی حیثیت سے اور پوری یقین کے ساتھ کہہ سکتا ہوں کہ فلم میں کوئی بھی ناگوار یا بدنیتی سین نہیں ہے، اس حوالے سے میں نے سنسر بورڈ کو ایک بار پھر فلم کا جائزہ لینے کی درخواست کی تھی تاہم انہوں نے ایک بار پھر فلم کو کچھ کٹوتیوں کے ساتھ کلیئر کردیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: علی ظفر کیخلاف 2 ارب روپے کی ڈگری جاری کی جائے، میشا شفیع

انہوں نے کہا کہ فلم کی تشہیری مہم چل رہی ہیں اور اب فلم کی ریلیز سے محض ایک ہفتہ قبل کچھ گروپ کی جانب سے فلم کی ریلیز کو روکنے کی کوشش کی جارہی ہے اور اس بار وہ دباؤ ڈالنے والے حربے استعمال کرنے پر تلے ہوئے ہیں۔

خط میں ان کا مزید کہنا تھا کہ میں یہ آپ کے علم میں اس لئے لا رہا ہوں کہ نا صرف میری ٹیم اور مجھ پر دباؤ ڈالا جارہا ہے بلکہ تواتر سے ہونے والے واقعات کی وجہ سے سسنر بورڈ کی ساخت کو بھی نقصان پہنچ رہا ہے ۔

سرمد کھوسٹ کی ہدايتکاری ميں بننے والی اس فلم ميں عارف حسین، سمیعہ ممتاز، علی قریشی اور ایمان سلیمان جلوہ گر ہوں گے۔

فلم نے ریلیز سے قبل ہی بوسان فلم فیسٹیول میں’کم جیسوئک‘ایوارڈ جیتنے میں کامیاب ہوگئی۔

 

متعلقہ خبریں