جی ٹی وی نیٹ ورک
پاکستان

‘قومی سلامتی کے امور پر سیاست نہیں کرنی چاہیے’

سیاست

اسلام آباد : وزیر اعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا کہنا ہے کہ قومی سلامتی کے امور کو سیاست کی نظر نہیں کرنا چاہیے اور اس روایت کا خاتمہ ہونا چاہیے۔

اسلام آباد میں پریس کانفرس کرتے ہوئے انہوں نے امید ظاہر کی کہ پارلیمنٹ موجودہ بحث کو ہمیشہ کے لیے حل کرنے میں قانونی و آئینی کردار ادا کرے گا۔

انہوں نے یہ بیان نہیں کیا کہ پارلیمنٹ میں کونسا معاملہ زیر بحث ہے تاہم ان کے بیان سے یہ تاثر ملتا ہے کہ وہ چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت ملازمت کے حوالے سے قانون سازی کی بات کر رہی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘پاکستان کے اداروں کی ذمہ داری ہم سب پر عائد ہوتی ہے جو قوم کی فلاح کے ضامن ہیں’۔

فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان ملک کو معاشی طور پر مستحکم کرنے کے ساتھ ساتھ کاروبار میں آسانیاں پیدا کرنے، روزگار اور دولت پیدا کرنے کے مواقع فراہم کرنے کے ایجنڈے پر عمل پیرا ہیں،

ملک کو مستحکم کرنےمیں کامیاب ہوگئے ہیں نیا سال ترقی و خوشحالی کا سال ہوگا۔ وزیراعظم

نیا شروع ہونے والا سال 2020 امید، ریلیف اور خوشحالی کا سال ثابت ہوگا، رواں سال پسے ہوئے طبقات کی ترقی اور انہیں قومی دھارے میں لانے کا سال ہوگا اور پسے ہوئے طبقات کو ان کا حق دلانا اولین ترجیح ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ یہ بھی انتہائی مسرت کی بات ہے کہ وزیراعظم کے پناہ گاہ اور لنگر خانوں کے منصوبوں کی ذمہ داری بیرون ملک مقیم پاکستانیوں نے لے لی ہے جبکہ ماضی میں ایسی کوئی مثال نہیں ملتی۔

معاون خصوصی نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان پر جہاں پاکستان کے 22کروڑ عوام اعتماد کر رہے ہیں وہی خطے اور مسلم ممالک کی قیادت بھی وزیراعظم پر اعتماد کر رہی ہے اور یو اے ای کے سربراہ کا پاکستان کا دورہ بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پہلی بار پاکستان دنیا کے سرمایہ کاروں کا کھلے دل سے خیر مقدم کر رہا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہمارے نوجوان ہماری حقیقی قوت ہیں، ہمارے بیرون ملک مقیم پاکستانی ان نوجوانوں کی ترقی کے لیے جو کردار ادا کررہے ہیں وہ لائق تحسین ہے۔

متعلقہ خبریں