جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

کورونا وائرس: کراچی میں پہلی ہلاکت، پنجاب میں مزید کیسز

پہلی

ملک میں تیزی سے پھیلتے کورونا وائرس سے اموات کا سلسلہ نہ رک سکا اور وائرس سے سب سے زیادہ متاثرہ صوبہ سندھ میں پہلی ہلاکت سامنے آئی ہے

جبکہ پنجاب میں مزید نئے کیسز آنے سے ملک میں کیسز کی مجموعی تعداد 464 ہوگئی ہے۔

مذکورہ مریض کراچی کا رہائشی تھا اور اسے مختلف بیماریاں بھی لاحق تھیں تاہم مریض کی کوئی سفری تاریخ موجود نہیں تھی۔

اس حوالے سے سندھ کی وزیر صحت ڈاکٹر عذرا فضل پیچوہو نے بذریعہ ویڈیو پیغام تصدیق کی کہ سندھ میں ایک 77 سالہ شخص کی کورونا وائرس کی وجہ سے موت واقع ہوئی۔

اپنے پیغام میں انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے ایک نجی ہسپتال میں ایک موت ہوئی ہے اور 77 سالہ مریض کو مزید بیماریاں بھی لاحق تھیں۔

ڈاکٹر عذرا فضل پیچوہو کا کہنا تھا کہ مریض کو کینسر، ذیابیطس اور فشار خون (بلڈ پریشر) کی شکایت بھی تھی

جس کی وجہ سے ان کی طبیعت بہت ناساز تھی، لہٰذا جب انہیں کورونا وائرس ہوا تو ان کی موت اس سے واقع ہوگئی۔

ایئرپورٹ ہوٹل کراچی میں قرنطینہ زون بنانے کی منظوری

علاوہ ازیں محکمہ صحت سندھ کی میڈیا کور آرڈینٹر میران یوسف کا کہنا تھا کہ مریض کراچی کا رہائشی تھا

اور ان کی کوئی سفری یا رابطے کی تفصیلات نہیں ملیں۔

پنجاب میں مزید کیسز سے مریضوں کی تعداد 96 ہوگئی

علاوہ ازیں ترجمان محکمہ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر قیصر آصف نے بتایا کہ صوبے میں مزید 16 کیسز کی تصدیق کی اور بتایا کہ کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد 96 ہوگئی ہے۔

انہوں نے مریضوں کے بارے میں مزید بتایا کہ ان میں 71 زائرین ہیں جبکہ باقی 15 کا تعلق لاہور، 2 کا ملتان، 3 کا مظفر گڑھ، ایک کا راولپنڈی، 3 کا گجرات اور ایک کا جہلم سے ہے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ تمام مصدقہ مریض آئیسولیشن وارڈز میں داخل ہیں اور انہیں طبی سہولیات فراہم کی جارہی ہے۔

مزید برآں ان کا کہنا تھا کہ اب تک صوبہ بھر کے ہسپتالوں میں 528 مشتبہ مریضوں کے لیب ٹیسٹ کیے جا چکے ہیں، جس میں 409 ٹیسٹ منفی آئے جبکہ 23 کے نتائج آنا باقی ہے۔

قبل ازیں صبح سویرے پنجاب میں کورونا وائرس کے مزید 2 مریضوں کی تصدیق کی گئی تھی اور صوبے کے پرائمری اور سیکنڈری ہیلتھ کیئر کے ترجمان نے بتایا تھا کہ تعداد 80 ہوئی۔

متعلقہ خبریں