جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

خیبر پختونخوا میں آٹے کی قیمتوں میں اضافہ، صوبائی وزیر خوراک اور ڈی سی پشاور عدالت طلب

وزیر خوراک اور ڈی

پشاور : عدالت نے آٹے کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف دائر درخواست پر صوبائی وزیر خوراک، سیکریٹری خوراک اور ڈی سی پشاور کو طلب کرلیا۔

پشاور ہائیکورٹ کے 2 رکنی بنچ نے آٹے کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف دائر درخواست پر سماعت کی۔ عدالت نے صوبائی وزیر خوراک، سیکریٹری خوراک اور ڈی سی پشاور کو کل طلب کرلیا۔

سماعت کے دوران جسٹس قیصر رشید نے استفسار کیا کہ اے جی صاحب حکومت کیا کررہی ہے؟ عام آدمی کو 20 روپے کی روٹی مل رہی ہے۔ چینی کا بھی بحران ہے، یہ کیا ہورہا ہے؟

یہ بھی پڑھیں : آٹے کی مناسب قیمت پر دستیابی یقینی بنائی جائے، وزیراعظم کی ہدایت

عدالت نے کہا کہ شوگر بحران میں جو ملوث تھے ان کو حکومت نے کلین چٹ دے دی۔ وہ بڑے مگر مچھ کہاں چلے گئے؟ جہاں ضروت نہیں، حکومت وہاں پر پیسے خرچ کررہی ہے۔ آٹا اور چینی کی قیمتوں میں اضافہ ہورہا ہے، کسی کو پرواہ نہیں ہے۔ سرکاری ریٹ پر جو آٹا مل رہا ہے وہ چوکر ہے آٹا نہیں، میں نے خود مارکیٹ میں جاکر دیکھا ہے۔

اٹارنی جنرل کے پی نے کہا کہ ہماری تو صرف 6 شوگر ملز ہیں، باقی ہماری نہیں ہیں۔ جسٹس قیصر نے ریمارکس دیئے کہ صوبے اور وفاق میں آپ کی حکومت ہے عوام کو ریلیف دینا حکومت کی ذمہ داری ہے۔

متعلقہ خبریں