تیز ہواؤں اور طوفانی بارش کی پیش گوئی، کراچی میں ایمرجنسی نافذ

کراچی: تیز ہواؤں اور طوفانی بارش کی پیش گوئی، کراچی میں ایمرجنسی نافذ، وسیم اختر نے بلدیہ عظمٰی میں، جبکہ صوبائی حکومت نے صوبائی اور بلدیاتی اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کردی۔

تفصیلات کے مطابق شہر میں تیز ہواؤں اور طوفانی بارش کی پیش گوئی کے بعد مئیر کراچی وسیم اختر نے بلدیہ عظمٰی کراچی میں ایمرجنسی نافذ کر دی اور عملہ کو اگلے احکامات تک ڈیوٹی پر رہنے کی ہدایت جاری کردیں ہیں۔

شہر میں ہنگامی صورتحال کے باعث محکمہ میونسپل سروسز، فائر بریگیڈ، صحت، انجینئرنگ، واٹر بورڈ اور دیگر محکموں کو حکام کی جانب سے الرٹ رہنے کی ہدایت جاری کردی گئی ہیں اور کسی بھی ہنگامی صورت حال سے نمٹنے کی تیاری مکمل رکھنے کی بھی ہدایت کی گئیں ہیں۔

صوبائی حکومت نے تمام شہری اداروں کو باہمی رابطوں کو مضبوط بنا کرہنگامی صورت حال میں فوری کارروائی کرنے کی ہدایت دی ہیں، صوبائی اور بلدیاتی اسپتالوں میں بھی کسی بھی ایمرجنسی کی صورتحال سے نمٹنے کے لئیے ایمرجنسی نافذ کردی گئی ہے۔

شہری اداروں نے طوفان اور تیز ہوائیوں کی پیشن گوئی پر شہریوں کواحتیاطی تدبیر اختیار کرنے ہدایت جاری کر دی ہیں،

شہر کے مختلف علاقوں میں گذشتہ رات سے بجلی غائب ہے، جس کے باعث شہری شدید مشکلات کا شکار ہیں، کے الیکڑک انتظامیہ صورتحال پر قابو پانے میں تاحال ناکام ہے۔

کے الیکڑک کے ترجمان کاکہنا ہے کہ طوفانی ہواؤں کے باعث کچھ علاقوں سے مقامی سطح پر بجلی سے متعلق شکایات کو بروقت درست کردیا گیا ہے۔

گلشن اقبال، فیڈرل بی ایریا، صدر، کورنگی، کیماڑی اور لیاری کے علاقوں سمیت شہر بھر میں بجلی بحال کردی گئی ہے جبکہ نارتھ کراچی اور گلستان جوہر کے کچھ علاقوں میں مقامی فالٹس کو جلد درست کر دیا جائے گا۔