جی ٹی وی نیٹ ورک
دنیا

فرانسیسی صدر ایک چال باز شخص ہے : آیت اللہ علی خامنہ ای

فرانسیسی صدر

تہران : آیت اللہ علی خامنہ ای نے کہا ہے کہ فرانسیسی صدر ایک چال باز شخص ہے جو امریکا کے ساتھ ملی بھگت کے تحت کام کررہا ہے۔

ایران کے روحانی رہنماء آیت اللہ علی خامنہ ای نے فرانسیسی صدر عمانویل میکروں کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ عمانویل ایک چال باز شخص ہے جو امریکا کے ساتھ ملی بھگت کے تحت کام کررہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : امریکی پابندیوں کے باوجود ایران کی برآمدات میں اضافہ

خیال رہے کہ فرانسیسی صدر عمانویل میکروں کہا تھا کہ واشنگٹن اور تہران کے مابین بات چیت سے مسائل حل ہوجائیں۔

فرانسیسی صدر کے بیان کے رد عمل میں خامنہ ای نے کہا کہ فرانسیسی صدر سازشی ہیں یا امریکا سے ملے ہوئے ہیں۔

ایران کے سرکاری ٹیلی ویژن نے خامنہ ای کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ان کا ملک امریکی دباؤ میں نہیں آئے گا اور نہ ہی امریکا کے ساتھ بات چیت سے مسائل حل ہوں گے۔

خامنہ ای نے کہا کہ امریکا کے اثر و رسوخ کو محدود کرنے کا ایک طریقہ یہ ہے کہ اس کے ساتھ کسی بھی طرح کی بات چیت سے انکار کیا جائے۔ جو لوگ یہ سوچتے ہیں کہ دشمن کے ساتھ مذاکرات سے ہمارے مسائل حل ہوں گے وہ غلط فہمی کا شکار ہیں۔

دوسری طرف ایران کی قومی سلامتی اور خارجہ پالیسی کمیٹی کے سربراہ مجتبی ذوالنور نے کہا کہ اگر یورپی ممالک جوہری معاہدے کی شرائط اور اس کے عہدو پیمان پورے نہ کیے تو ایران معاہدے کی شرائط سے دست برداری کا چوتھا قدم اٹھائے گا۔ یہ قدم اتنا سخت ہونا چاہیے تاکہ یورپی ممالک ایران کے ساتھ کیے گئے وعدے پورے کرنے پرمجبور ہوجائیں۔

ان کا کہنا تھا کہ چوتھے مرحلے میں ہمارے پاس بہت سارے آپشن ہیں ہم ایک قدم کے طور پر سنٹری فیوج آپریشن کو تیز کر سکتے ہیں۔” بھاری پانی ” اور "یورینیم کی افزدوگی” کے ذخیروں میں اضافہ کرسکتے ہیں۔ ہم افزودہ یوینیم کی پیداوار کے تناسب کو اعلی سطح تک بڑھا سکتے ہیں۔

متعلقہ خبریں