جی ٹی وی نیٹ ورک
پاکستان

نواز شریف خطرے سے باہر، جنیٹک ٹیسٹ کا فیصلہ میڈیکل بورڈ کرے گا : یاسمین راشد

جنیٹک ٹیسٹ ڈاکٹر یاسمین راشد

لاہور : ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا ہے کہ نواز شریف کی حالت خطرے سے باہر ہے، اس نوعیت کے مریضوں کے پلیٹ لیٹس بڑھتے اور کم ہوتے ہیں۔ نواز شریف کے جنیٹک ٹیسٹ کا حتمی فیصلہ میڈیکل بورڈ ہی کرسکتا ہے۔

صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے میاں نواز شریف کی صحت سے متعلق جاری تفصیلی بیان میں کہا ہے کہ  نواز شریف جیسی نوعیت کے مریضوں کے پلیٹ لیٹس بڑھتے اور کم ہوتے ہیں، ان کی صحت کی مجموعی صورتحال خطرے سے باہر ہے۔ نوازشریف کی شوگر، بلڈ پریشر اور دل کی دھڑکن میں بہتری آئی ہے۔

ڈاکٹر یاسمین راشد نے بتایا کہ نواز شریف کو شریف سٹی اسپتال لے جانے کی اطلاع کے بعد وہاں کے ڈاکٹرز کو علاج معالجہ کے حوالہ سے تمام تفصیلات سے آگاہ کردیا گیا ہے۔ میڈیکل بورڈ نے شریف سٹی اسپتال کے تمام ڈاکٹرز کے ساتھ خصوصی ملاقات بھی کی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : نواز شریف کے سروسز اسپتال سے ڈسچارج ہونے کی تیاریاں مکمل

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں کسی بھی مریض کے ڈی این اے ٹیسٹ کے ذریعے بیماری کی تشخیص کی جاسکتی ہے۔ نواز شریف کے جنیٹک ٹیسٹ کا حتمی فیصلہ میڈیکل بورڈ ہی کرسکتا ہے، ان کی موجودہ بیماری نئی نہیں بلکہ پرانی ہے۔

صوبائی وزیر نے مزید بتایا کہ نوازشریف کی بون میرو اب خود سے پلیٹ لیٹس بنا رہی ہے۔ کسی بھی مریض کی حالت کو مستقل رکھنے کیلئے جسم میں پلیٹ لیٹس کا خود سے بننا بہت ضروری ہے۔

متعلقہ خبریں