جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

حکومت کا انتخابی اصلاحات کیلئے پارلیمانی کمیٹی بنانے کا فیصلہ

انتخابی اصلاحات

اسلام آباد : حکومت نے انتخابی اصلاحات اور گلگت بلتستان کو عبوری صوبہ بنانے کے لیئے حکومت اور اپوزیشن کے ارکان پر مشتمل کمیٹی بنانے کا فیصلہ کرلیا۔

اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر سے وزیراعظم برائے پارلیمانی امور مشیر ڈاکٹر بابر اعوان نے ملاقات کی، جس میں اہم قانون سازی کے عمل کو تیز کرنے پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا ہے۔

ملاقات میں آئینی اور الیکشن اصلاحات پر کمیٹی تشکیل دینے پر اتفاق کیا گیا۔ کمیٹی کی صدارت اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کریں گے۔ کمیٹی گلگت بلتستان عبوری صوبے سے متعلق آئینی اور قانونی پہلوؤں کا جائزہ لے گی، جس میں اپوزیشن اور حکومت کو برابر نمائندگی دی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں : لانگ مارچ اب حمزہ شہباز اور مریم نواز کے درمیان گدی نشینی کے لیئے ہو گا : شہباز گل

کمیٹی اپوزیشن کے تحفظات کا بھی تفصیلی جائزہ لے کر متفقہ لائحہ عمل مرتب کرے گی اور الیکشن اصلاحات کا زیر التواء بل کا بھی ازسرنو جائزہ لے گی۔ سینٹ الیکشن سے متعلق بھی آئین میں ترمیم کے حوالے سے اپوزیشن جماعتوں کے ساتھ مشاورت کیا جائے گی۔

اسپیکر قومی اسمبلی نے کہا کہ سینٹ انتخابات پر اٹھنے والے سوالات کا تدارک ناگزیر ہے۔ انتخابی اصلاحات وقت کی اہم ضرورت ہے۔ قانون سازی کے ذریعے اہم قانونی معاملات میں اصلاحات لائی جا سکتی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت اور اپوزیشن کو قانون سازی کے ذریعے عوامی اہمیت کے اہم معاملات کو خوش اسلوبی سے حل کرنا چاہیے۔ سینٹ انتخابات میں اصلاحات نہ ہونے کی وجہ سے تماشہ بنا رہا۔ ہمیں ماضی کو بھلا کر مستقبل کے بارے میں سوچنا ہو گا۔

دونوں رہنماؤں کی ملاقات کے دوران کورونا صورتحال میں قومی اسمبلی اجلاس سے متعلق بھی مشاورت کی گئی۔

متعلقہ خبریں