جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

حکومت کا سرکاری ملازمین کی ترقی 3 سال میں کرنے کا فیصلہ

ترقی 3 سال میں

اسلام آباد : شفقت محمود کا کہنا ہے کہ سرکاری ملازم کا ریفرنس نیب میں زیر تفتیش ہے تو اس کی پروموشن نہیں ہوگی، سرکاری ملازمین کی ترقی 3 سال میں کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم نے انسٹیٹیوشنز ریفارمز پر کابینہ کی کمیٹی بنائی ہے۔ ادارہ جاتی اصلاحات کمیٹی کا مقصد اداروں کی کارکردگی کو بہتر بنانا ہے۔ سول سروسز ریفارمز کے 6 حصے ہیں، جن پر کل فیصلے ہوئے۔ سرکاری ملازمین کی پروموشن کیسے ہوگی، اس میں تبدیلیاں کی گئیں ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : سندھ حکومت کا سنگین الزامات پر 4 ہزار سے زائد سرکاری ملازمین کے خلاف کارروائی کا فیصلہ

انہوں نے کہا کہ سرکاری ملازم کا ریفرنس نیب میں زیر تفتیش ہے تو اس کی پروموشن نہیں ہوگی، انکوائری کو 3 سال ہوجائیں تو پرموشن کی اجازت ہوگی۔ کمیشن افسران کے بین الصوبائی تبادلوں کی پالیسی تبدیل کی گئی ہےْ پاکستان ایڈ منسٹریٹو سروسز کی اسٹرینتھ کو کم کیا گیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سرکاری ملازمین کی ترقی 3 سال میں کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ پہلی دفعہ تقرری کی مجاز اتھارٹی کا تعین کیا گیا ہے۔ ملازمین کی ترقی کے لیے بورڈز کے اختیارات میں اضافہ کیا گیا۔

متعلقہ خبریں