رمضان شوگر مل کیس : حمزہ شہباز اور وکلاء کی جج کے ساتھ تلخ کلامی

حمزہ شہباز تلخ کلامی

لاہور : احتساب عدالت میں رمضان شوگر مل کیس کی سماعت ہوئی۔ حمزہ شہباز کے جوڈیشل ریمانڈ میں اٹھائیس نومبر تک توسیع، سماعت کے دوران حمزہ شہباز اور وکلاء کی جج کے ساتھ تلخ کلامی ہوئی۔

لاہور احتساب عدالت میں رمضان شوگر مل کیس کی سماعت ہوئی۔ عدالت نے حمزہ شہباز کو روسٹرم پر بلا لیا۔ عدالت کے رو برو حمزہ شہباز کے وکلاء کی لیگل ٹیم بھی پیش ہوئی۔

عدالت میں حمزہ شہباز کی فاضل جج کے ساتھ تلخ کلامی ہوئی۔ جج نے کہا کہ مسٹر حمزہ آپ روسٹرم پر آئیں۔ حمزہ شہباز نے کہا کہ آپ میرے ساتھ کیسی گفتگو کر رہے ہیں؟ فاضل جج نے کہا کہ آپ اس وقت عدالت میں ہیں کوئی پریس کانفرس نہیں کر رہے۔

یہ بھی پڑھیں : آصف زرداری کی کراچی علاج کیلئے منتقلی کی درخواست پر فیصلہ محفوظ

عدالت نے ریمارکس دیئے کہ اگر آپ کو لوگوں سے ملنا ملانا ہوتا ہے، تو کمرہ عدولت کے باہر ملا کریں، عدالت کا ڈیکورم برقرار رکھا جائے، کسی بھی صورت بد نظمی برداشت نہیں ہوگی۔ آج کے بعد حمزہ شہباز سیدھا روسٹرم پر آئیں گے۔

حمزہ شہباز کے وکلاء کی بھی فاضل جج کے ساتھ تلخ کلامی ہوئی۔ وکیل حمزہ شہباز نے کہا کہ اس طرح تو قاتلوں کو نہیں بلایا جاتا جس طرح آپ نے حمزہ شہباز کو بلایا ہے۔

نیب پراسیکوٹر کی جانب سے عدالت میں ضمنی ریفرنس دائر کر دیا گیا۔ عدالت نے حمزہ شہباز کے جوڈیشل ریمانڈ میں 28 نومبر تک توسیع کردی۔